1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

تل ابیب میںخود کش فلسطینی حملے میں 9 افراد ہلاک

اسرائیل کے تجارتی دارلحکومت تل ابیب میں آج شہر کے پرانے بس اسٹیشن کے قریب ایک مصروف کاروباری علاقے کے ایک ریستوراںمیں ایک خود کش فلسطینی حملہ آور کی طرف سے کئے گئے بم دھماکے میں، اب تک کی اطلاعات کے مطابق، کم ازکم 9 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے۔

دھماکے کے بعد زخمیوں کو طبی امداد دی جا رہی ہے

دھماکے کے بعد زخمیوں کو طبی امداد دی جا رہی ہے

یہ دھماکہ، جس میں حملہ آور بھی ہلاک ہو گیا، مقامی وقت کے مطابق، بعد دوپہر دو بجے کے قریب کیا گیا اور فوری طور پر اس کی ذمے داری دوعسکریت پسند فلسطینی گروپوں، جہاد اسلامی اور الاقصیٰ بریگیڈ نے قبول کرلی ہے۔ یہ دھماکہ فلسطینی انتہا پسندوںکی طرف سے اسرائیل میں کئے گئے حالیہ بم دھماکوں کے مقابلے میں کہیں زیادہ طاقتور تھا اور درجنوں زخمیوں میں سے کئی ایک کی حالت تشویشناک بتائی گئی ہے۔

اسرائیل نے تل ابیب میں اس خود کش حملے کا ذمے دار حماس کی قیادت میں قائم نئی فلسطینی حکومت کو ٹھہرایاہے۔ قائم مقام اسرائیلی وزیر اعظم Ehud Olmertکا فوری مَوقف یہ تھا کہ اسرائیل اس حملے کے بعد اپنے مناسب رد عمل پر غور کررہا ہے۔فلسطینی صدر محمود عباس نے اس نئے حملے کو خطے میں امن کوششوں کے لئے تباہ کن قرار دیتے ہوئے اس کی سخت مذمت کی ہے۔