1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

تشدد رُکوانے کے لیے عرب لیگ کا بشارالاسد کے نام پیغام

عرب لیگ کے وزرائے خارجہ نے شام کے صدر بشار الاسد کو ایک ’فوری پیغام‘ بھیجا ہے، جس میں ان سے تشدد روکنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

default

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق عرب لیگ کی جانب سے یہ پیغام جمعے کو شام میں جمہوریت نواز چالیس مظاہرین کی ہلاکت کے بعد بھیجا گیا۔

اسے عرب لیگ کی جانب سے شام میں سکیورٹی فورسز کے کریک ڈاؤن کے خلاف سخت ترین پیغام قرار دیا گیا ہے۔ جمہوریت نواز کارکنوں کے مطابق جمعے کو سکیورٹی فورسز کی فائرنگ کے نتیجے میں کم از کم چالیس افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ مظاہرین ملک میں نوفلائی زون کا مطالبہ کر رہے تھے۔

حکومت مخالف گروپ کے ایک ترجمان عمر الدلیبی نے جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے کو بتایا کہ یہ ہلاکتیں صوبہ حمص اور حما میں ہوئی ہیں۔ نماز جمعہ کے بعد لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے ملک کے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے کیے۔ سکیورٹی فورسز نے متعدد افراد کو گرفتار بھی کیا۔

شام کے بحران سے متعلق عرب لیگ کے وزراء کی کمیٹی کا کہنا ہے کہ دمشق حکومت کے نام پیغام میں شام کے شہریوں کی مسلسل ہلاکتوں پر بے چینی کا اظہار کیا گیا ہے۔

Baschar Hafiz al-Assad

شام کے صدر بشار الاسد

عرب لیگ کے اعلامیے کے مطابق اس کمیٹی نے امید ظاہر کی ہے کہ شام کی حکومت اپنے شہریوں کے تحفظ کے لیے اقدامات کرے گی۔ عرب وزراء اتوار کو قطر کے دارالحکومت دوہا میں شام کے حکام سے ملاقات کرنے والے ہیں۔

خیال رہے کہ رواں ماہ کے آغاز میں دمشق حکومت نے کہا تھا کہ سکیورٹی اہلکاروں سمیت ملک میں ہونے والی دیگر ہلاکتوں کے حوالے سے قومی سطح پر تفتیش جاری ہے۔ ساتھ ہی بین الاقوامی کمیشن کی انکوائری پر غور کا عندیہ بھی دیا گیا تھا۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق مارچ میں بشار الاسد کے خلاف شروع ہونے والے احتجاجی مظاہروں کے دوران اب تک انتیس سو سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

رپورٹ: ندیم گِل / خبر رساں ادارے

ادارت: افسر اعوان

DW.COM

ویب لنکس