1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

مہاجرین کا بحران

ترکی نے بلغاریہ کے ساتھ اپنی سرحد دوبارہ کھول دی

ترکی نے بلغاریہ کے ساتھ اپنی سرحد ایک مرتبہ پھر کھول دی ہے۔ یہ سرحد ترکی میں حکومت کا تختہ الٹنے کی کوشش کے دوران ہفتے کی صبح بند کر دی گئی تھی۔

بلغاریہ کے وزیراعظم بوئکو بوریسوف کے مطابق ترک حکام کی جانب سے یقین دہانی کروائی گئی ہے کہ غیرقانونی تارکین وطن کو یہ سرحد عبور کرنے سے روکا جائے گا، جس کے بعد ترکی اور بلغاریہ کی سرحدی کراسنگ دوبارہ کھول دی گئی ہے۔

بلغاریہ کے وزیراعظم کے مطابق اس دوران تارکین وطن کی جانب سے غیرقانونی طور پر سرحد عبور کرنے کے واقعات میں کوئی اضافہ ریکارڈ نہیں کیا گیا ہے۔ بوریسوف نے ترک سفیر سے ملاقات کے بعد بتایا کہ انقرہ حکومت اس سرحد کے ذریعے مہاجرین کو یورپی یونین میں پہنچنے سے روکنے کے لیے بھرپور اقدامات کر رہی ہے اور یہ یقین دہانی کروائی گئی ہے کہ مہاجرین کو بلغاریہ کی سرحد عبور کرنے سے روکا جائے گا۔

Bulgarien Bojko Borissow Premierminister beim EU Flüchtlingsgipfel in Brüssel

ترکی سے بلغاریہ کے راستے بھی مہاجرین مغربی یورپ پہنچنے کی کوشش کرتے رہے ہیں

ترکی میں حکومتی تختہ الٹنے کی کوشش کے تناظر میں مہاجرین کی ممکنہ آمد کو روکنے کے لیے بلغاریہ نے ترک سرحد پر واقع کراسنگ پر اپنے دو سو تیس اضافی فوجی تعینات کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس سرحد پر بلغاریہ پہلے ہی خار دار تار لگا چکا ہے، تاکہ غیرقانونی تارکین وطن ملک میں داخل نہ ہو پائیں۔

بوریسوف نے صحافیوں سے بات چیت میں کہا، ’’ہم ترک حکام سے رابطے میں ہیں۔ ہم نے ترک وزیراعظم اور سفیر سے بات چیت کی ہے۔ مجھے پوری یقین دہانی کرائی گئی ہے کہ اس سرحد سے مہاجرین بلغاریہ میں داخل نہیں ہوں گے۔‘‘

ان کا مزید کہنا ہے کہ ترکی میں موجود شامی، عراقی اور افغان تارکین وطن مہاجر بستیوں میں پرامن ہیں اور ترکی میں حکومتی تختہ الٹنے کی کوشش کے تناظر میں ان کی نقل و حرکت پر کوئی فرق نہیں پڑا اور نہ ہی ان کی جانب سے ملک سے فرار ہو کر یورپی یونین پہنچنے کی کوئی بڑی کوشش سامنے آئے ہے۔

خیال رہے کہ ہفتے کے روز پورا دن بلغاریہ کے دارالحکومت صوفیہ سے ترک شہروں استنبول اور انطالیہ کے لیے پروازیں بھی منتقطع رہیں۔ ترک حکومت کا تاہم کہنا ہے کہ اب ملک میں حالات قابو میں ہیں اور معمولات زندگی بحال ہو چکے ہیں۔