1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ترکی میں داعش سے تعلق کے شبے میں آٹھ افراد گرفتار

ترکی کی پولیس نے نے استنبول کے اتاترک ایئرپورٹ سے آٹھ افراد کو دہشت گرد گروپ داعش کے ساتھ تعلقات رکھنے کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔ ترک حکام کے مطابق یہ لوگ غیر قانونی طور پر جرمنی جانا چاہتے تھے۔

جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے کے مطابق یہ آٹھوں افراد، جو ممکنہ طور پر مراکش کے شہری ہیں، کاسابلانکا سے استنبول پہنچے تھے۔ ترکی کی سرکاری خبر رساں ایجنسی انادولو کے مطابق یہ افراد خود کو سیاح قرار دے رہے تھے۔ ان افراد نے حکام کو بتایا کہ انہوں نے ایک ہوٹل میں بکنگ کرا رکھی ہے تاہم رپورٹ کے مطابق پولیس نے جب اس بات کی تصدیق کی تو یہ غلط ثابت ہوئی۔ یہ افراد منگل 17 نومبر کو دیر گئے استنبول پہنچے تھے۔

انادولو نیوز ایجنسی کی طرف سے ایک دستاویز بھی جاری کی گئی ہے جس کے بارے میں کہا گیا ہے کہ یہ اس گروپ سے برآمد ہوئی ہے۔ اس دستاویز میں جرمنی تک پہنچنے کے راستے کی منصوبہ بندی موجود ہے۔ اس منصوبے کے مطابق یہ افراد ترکی کے مغربی حصے کے شہر ازمیر سے ایک کشتی کے ذریعے یونان پہنچنا چاہتے تھے۔ ایتھنز سے اس گروپ نے مشرقی یورپ کے راستے ویانا پہنچنے کی منصوبہ بندی کی ہوئی تھی، جب کہ وہاں سے حتمی طور پر وہ جرمنی پہنچتے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق ترک حکام رواں برس کے آغاز سے اب تک شدت پسند تنظیم اسلامک اسٹیٹ سے تعلق رکھنے کے شبے میں ایک ہزار سے زائد افراد کو گرفتار کر چکے ہیں۔ رواں برس جولائی میں انقرہ کی طرف سے ’دہشت گردی کے خلاف جنگ‘ کے نام پر چھاپوں کا سلسلہ بڑھا دیا گیا تھا۔ اب تک 300 کے قریب افراد پر باقاعدہ فرد جرم عائد کی جا چکی ہے۔

پیرس کے مختلف عوامی مقامات پر کیے جانے والے ان حملوں میں 129 افراد ہلاک ہوئے تھے

پیرس کے مختلف عوامی مقامات پر کیے جانے والے ان حملوں میں 129 افراد ہلاک ہوئے تھے

روئٹرز کے مطابق پولیس نے رواں ماہ کے آغاز میں بھی استنبول کے اتاترک ایئرپورٹ سے 41 افراد کو گرفتار کیا تھا۔ مراکش سے آنے والے ان افراد کو ایک ساتھی مسافر کی طرف سے پولیس کو مطلع کرنے کے بعد گرفتار کیا گیا۔ ان میں سے 20 افراد کو فوری طور پر مراکش واپس بھیج دیا گیا تھا۔ ڈی پی اے کے مطابق مراکش میں بھی رواں ہفتے ایسے چار افراد کو گرفتار کیا گیا تھا جن پر شبہ ہے کہ وہ اسلامک اسٹیٹ کے ایک سیل سے تعلق رکھتے ہیں۔

یورپی یونین تک پہنچنے کی کوشش کرنے والے مہاجرین اور تارکین وطن کے لیے ترکی ایک اہم پڑاؤ ہے جہاں سے وہ کشتیوں کے ذریعے یونان تک پہنچتے ہیں اور پھر وہاں سے یورپ کے دیگر ممالک کی طرف بڑھ جاتے ہیں۔

پیرس میں جمعہ 13 نومبر کو ہونے والے دہشت گردانہ حملوں کے بعد شدت پسندوں کے خلاف آپریشن میں تیزی آ گئی ہے۔ پیرس کے مختلف عوامی مقامات پر کیے جانے والے ان حملوں میں 129 افراد ہلاک ہوئے تھے۔