1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ترکی روہنگیا مہاجرین کو امداد فراہم کرے گا

ترکی میانمار میں مبینہ تشدد سے چھٹکارا حاصل کر کے بنگلہ دیش پہچنے والے روہنگیا مسلمانوں کو دس ہزار ٹن کی امداد فراہم کرے گا۔

نیوز ایجنسی روئٹرز کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے اعلان کیا ہے کہ ترکی کا امدادی ادارہ نقل مکانی پر مجبور روہنگیا آبادی کو ایک ہزار ٹن امداد فراہم کر چکا ہے اور کیمپوں میں موجود روہنگیا افراد کو مزید دس ہزار ٹن امداد فراہم کی جائے گی۔

اس ہفتے کے دوران ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن  نے میانمار کی رہنما  آنگ سان سوچی سے ٹی وی پر بھی گفتگو کی تھی۔ رجب طیب ایردوآن نے آنگ سان سوچی سے کہا ہے کہ تمام دنیا روہنگیا کے خلاف ہونے والی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے حوالے سے ’’شدید فکرمند‘‘ ہے۔ ترک صدر کا مزید کہنا تھا، ’’ہم ہر طرح کی دہشت گردی اور عام شہریوں کے خلاف ہونے والے آپریشن کی مذمت کرتے ہیں۔ میانمار میں انسانی صورتحال انتہائی سنگین ہوتی جا رہی ہے، جس سے نفرت جنم لے رہی ہے۔‘‘

ویڈیو دیکھیے 01:56

بے وطن روہنگیا مسلمان کہاں جائیں؟

25 اگست سے اب تک 150000 روہنگیا بنگلہ دیش پہنچ چکے ہیں۔ میڈیا اطلاعات کے مطابق پچیس اگست کو روہنگیا عسکریت پسندوں نے پولیس پوسٹوں اور فوجی اڈے پر حملہ کر دیا تھا۔ اس  واقعہ کے بعد میانمار کی فوج اور روہنگیا کے درمیان جھڑپوں میں اب تک چار سو سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

DW.COM

Audios and videos on the topic