1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

تبتیوں کے روحانی پیشوا دلائی لامہ کی 75 ویں سالگرہ

تبتی باشندوں کے روحانی پیشوا اور تبت کے جلاوطن رہنما دلائی لامہ کی 75 ویں سالگرہ آج منگل کے روز منائی جا رہی ہے۔ مرکزی تقریب شمالی بھار تی قصبے دھرم شالا میں ہوئی، جہاں دلائی لامہ عشروں سے جلاوطنی کی زندگی گزار رہے ہیں۔

default

دلائی لامہ اور ان کی سالگرہ کے روز جمع ہونے والے عقیدت مند

دلائی لامہ بھارت کے دھرم شالا نامی پہاڑی قصبے میں 1959 سے مقیم ہیں، جہاں وہ نصف صدی سے بھی زائد عرصے سے جلاوطنی کی زندگی گزار رہے ہیں اور اسی قصبے میں تبت کی مرکزی جلاوطن حکومت بھی قائم ہے۔

Indien Tibet Dalai Lama Geburtstag in Dharmsala Mönche mit Süßigkeiten

سالگرہ کی تقریب کے دوران عقیدت مندوں کے لئے میٹھے چاول لئے بدھ راہب

دلائی لامہ کی سالگرہ جہاں ان کے ہزار ہا پیروکاروں کے لئے انتہائی خوشی کا موقع ہے وہیں پر اب تبت کے باشندوں کے اس دنیاوی اور مذہبی رہنما کی بزرگی کے باعث یہ سوال بھی اٹھایا جا رہا ہے کہ ان کا جانشین کون ہو گا اور تبت ہی کے مسئلے پر دلائی لامہ اور بیجنگ میں چینی حکومت کے مابین انتہائی طویل جمود بالآخر کب ختم ہو گا۔

دھرم شالا میں اپنی سالگرہ کے موقع پر ہمالیہ کے اس پہاڑی قصبے میں میکلوڈ گنج نامی مرکزی بدھ عبادت گاہ کے سامنے شدید بارش کے باوجود جمع ہونے والے اپنے قریب پانچ ہزار پیروکاروں، سکولوں کے بے شمارطلبہ و طالبات اور بہت سے غیر ملکی سیاحوں پر مشتمل ایک اجتماع سے خطاب کیا ۔

جس میں ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنی زندگی میں جو مراحل طے کئے ہیں، اور جو کچھ اپنی زندگی میں حاصل کرنے کی کوشش کی ہے، جب وہ یہ سب کچھ دیکھتے ہیں تو انہیں محسوس ہوتا ہے کہ ان کی زندگی ضائع نہیں ہوئی۔

Dalai Lama feiert 75 Geburtstag mit Samdhong Rinpoche

سالگرہ کی تقریب کے دوران دلائی لامہ تبت کی جلاوطن حکومت کے وزیر اعظم رِنپوچے کے ہمراہ

اس موقع پر اپنی مادری زبان میں کی جانے والی ایک تقریر میں تبتی باشندوں کے اس پیشوا نے کہا کہ انہیں اس بات پر افسوس ہے کہ تبت کے عوام کو چینی حکام کی طرف سے مخالفت کے باعث ان کی سالگرہ منانے کی اجازت بھی نہیں دی گئی کیونکہ چین دلائی لامہ کو ایک علٰیحدگی پسند رہنما قرار دیتا ہے۔

دریں اثنا بھارت کے ہمسایہ ملک نیپال میں آج دلائی لامہ کی سالگرہ منانے کے لئے کئی سو تبتی باشندے کٹھمنڈو میں جمع ہوئے، جنہیں پولیس نے عارضی طور پر گرفتار کر لیا اور پھر کچھ دیر بعد رہا بھی کر دیا۔

اس کی وجہ یہ تھی کہ نیپالی حکومت نے ان تبتی باشندوں پر پابندی عائد کر رکھی تھی کہ وہ اپنے جلاوطن دنیاوی اور روحانی رہنما کی سالگرہ کی عوامی مقامات پر کوئی تشہیر نہ کریں۔

اس موقع پر دلائی لامہ کے پیروکاروں کو کسی عوامی جگہ پر کوئی تقریب منعقد کرنے سے روکنے کے لئے پولیس کی بھاری نفری بھی تعینات کی گئی تھی۔

نوبل امن انعام یافتہ 75 سالہ دلائی لامہ آج اپنی سالگرہ کے دن میکلوڈ گنج ٹیمپل میں جمع ہونے والے اپنے ہزاروں عقیدت مندوں سے خطاب کرتے ہوئے حسب معمول مسکرا رہے تھے اور بظاہر کافی صحت مند دکھائی دے رہے تھے۔

رپورٹ: عصمت جبیں

ادارت: مقبول ملک

DW.COM