1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

بین الاقوامی افواج کارروائی بند کریں: افغان صدر کرزئی

افغانستان کے صدر حامد کرزئی نے کہا ہے کہ افغانستان میں موجود بین الاقوامی افواج اپنے آپریشنز بند کر دیں۔ یہ بات انہوں نے نیٹو کے حملے میں ہلاک ہوئے نو بچّوں کے اہلِ خانہ سے ملاقات کے وقت کہی۔

default

افغان صدر حامد کرزئی

افغان صدر کرزئی نے ہفتے کے روز مشرقی صوبے کنڑ کے ایک علاقے میں نیٹو کے حملے میں ہلاک ہونے والے بچّوں کے خاندان والوں سے تعزیت کی۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ وہ وقار اور عجز کے ساتھ امریکہ اور نیٹو سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ افغانستان میں اپنی فوجی کارروائیاں ختم کر دیں۔

Deutschland ISAF in Afghanistan

حال ہی میں نیٹو کے ایک حملے میں متعدد شہری ہلاک ہوئے تھے

پاکستان کا نام لیے بغیر حامد کرزئی نے کہا کہ نیٹو اور امریکہ کو چاہیے کہ وہ دہشت گردوں کے خلاف کارروائی سرحد پار جا کے کریں کیوں کہ نو برس بیت چکے ہیں اور وہ بھی یہ بات جانتے ہیں کہ دہشت گردی کہاں سے ہوتی ہے۔

افغان صدر نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ افغان بہت صابر و شاکر ہوتے ہیں مگر اب ان کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا ہے۔

نیٹو کی جانب سے صدر کرزئی کے اس بیان پر کوئی تبصرہ اب تک سامنے نہیں آیا ہے۔

NO FLASH NATO Hauptquartier in Brüssel

برسلز میں قائم نیٹو کا مرکزی دفتر

قبل ا زیں افغان صدر نے کنڑ میں ہلاکتوں پر امریکہ کی جانب سے تاسف کو رد کرتے ہوئے اسے ناکافی قرار دیا تھا۔

دریں اثناء رواں برس جولائی سے نیٹو افواج کے مرحلہ وار انخلاء کے حوالے سے جمعے کے روز برسلز منعقدہ اجلاس میں نیٹو کے دفاعی وزراء نئے ضوابط پر متفق ہو گئے ہیں۔ واضح رہے کہ افغانستان سے غیر ملکی افواج کا انخلاء سن دو ہزار چودہ تک مکمل کیے جانے کا اعلان نیٹو اور امریکہ کی جانب سے سامنے آ چکا ہے تاہم مغربی ممالک یہ بھی کہتے رہے ہیں کہ افواج کا انخلاء افغانستان کے زمینی حقائق کو سامنے رکھ کر ہی کیا جائے گا۔

رپورٹ: شامل شمس⁄  خبر رساں ادارے

ادارت: امجد علی

DW.COM