1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

بھارت کے لیے ایرانی تیل کی ادائیگی میں پیش رفت

بھارت کی تیل صاف کرنے والی ریفائنریوں کی جانب سے ایران سے حاصل ہونے والے خام تیل کی ادائیگی کے سلسلے میں ایک طریقہٴ کار کو ڈھونڈ لیا گیا ہے۔ اب ادائیگی کا عمل ایک ترک بینک کے ذریعے مکمل کیا جائے گا۔

default

بھارت میں برآمد کیے جانے والے خام تیل کا بارہ فیصد ایران سے حاصل کیا جاتا ہے۔ ایران کو متنازعہ جوہری پروگرام کے حوالے سے بین الاقوامی پابندیوں کا سامنا ہے۔ اس باعث بھارت کی جانب سے ادائیگی کے عمل میں رکاوٹ دیکھی جا رہی تھی اور غیرادا شدہ رقم کا حجم بڑھتے بڑھتے پانچ ارب ڈالر تک پہنچ گیا ہے۔

Gas im Iran

بھارتی تیل برآمدات کا بارہ فیصد ایرانی تیل پر انحصار ہے

اس باعث ایران نے بھارتی حکومت کو متنبہ کیا تھا کہ وہ خام تیل کی ادائیگی کے عمل کو ممکن بنائے ورنہ اسے تیل کی سپلائی روک دی جائے گی۔ اگست کے لیے ایران کی جانب سے چار لاکھ بیرل خام تیل کی سپلائی سردست معطل ہے۔

بھارتی ریفائنریوں نے تیل کی سپلائی میں توازن قائم رکھنے کے لیے سعودی عرب سے اضافی تیل ضرور حاصل کیا ہے مگر یہ ایران کی جانب سے فراہم کیے جانے والے خام تیل کا ایک چوتھائی ہے۔

بھارت اور ایران مالی ادائیگیوں کے حوالے سے کوئی حل تلاش کرنے کی کوششوں میں تھے۔ اس سلسلے میں بھارتی ریفائنریوں نے ایک متبادل ذریعہ ڈھونڈنے میں کامیابی حاصل کی ہے۔ نئے طریقہ کار کے تحت بھارتی پیٹرو کیمیکل اداروں کا یونین بینک میں کھاتے کھولنا لازمی ہو گیا ہے۔ ترکی کا ہلک بینک یونین بینک سے موصول ہونے والی رقوم کی منتقلی کی تصدیق کرے گا۔

Ölförderung in Iran, Öl, Wirtschaft

ایران کا ایک پیٹرو کمیکل ادارہ

بھارت میں حکومتی سرپرستی میں چلنے والے تیل کے ادارے منگلور ریفائنری اینڈ پیٹرو کیمیکل لمیٹڈ (MRPL) نے ہلک بینک کے ذریعے ایرانی حکومت کو ادائیگی کی جو کوشش کی ہے وہ کامیاب ہوئی ہے۔ یہ ایک ٹیسٹ تھا۔ ایران کو رقم یورو میں ٹرانسفر کی گئی۔ بھارت کے سرکاری پیٹرو کیمیکل ادارےMRPL نے دو ذرائع کے ذریعے رقم منتقل کی ہے۔ رقم کی اس منتقلی میں بھارت کا یونین بینک بھی شامل ہے۔ یونین بینک حکام کے مطابق یہ پہلی آزمائشی ادائیگی ہے۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ ادائیگی کا یہ سلسلہ جاری رہ سکتا ہے۔ اسی طرح ایک اور بھارتی پیٹرو کیمیکل ادارے ایسر آئل کی جانب سے بھی ادائیگی کا عمل شروع کردیا گیا ہے۔ ماہرین اب بھی شکوک میں مبتلا ہیں کہ موجودہ طریقہٴکار بھی پائیدار نہیں اور اگلے دنوں میں امریکی دباؤ کے تحت رقوم کی منتقلی کا عمل رک سکتا ہے۔

بھارتی وزیر تیل جے پال ریڈی نے ادائیگی کے عمل میں پیش رفت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران کو خام تیل کی ادائیگی کی پہلی قسط جلد جاری کردی جائے گی۔

رپورٹ: عابد حسین

ادارت: ندیم گِل

DW.COM

ویب لنکس