1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

بھارت: کرائم رپورٹر کے قتل پر صحافیوں کا احتجاج

آج منگل کو سینکڑوں صحافیوں نے ممبئی کی سڑکوں پر نکل کر ایک مشہور اخبار کے کرائم رپورٹر کے قتل کی سخت مذمت کرتے ہوئے فیڈرل پولیس سے اس کیس کی مکمل چھان بین کا مطالبہ کیا۔

default

بھارتی صحافیوں کا کہنا ہے کہ انہیں جرائم پیشہ گروہوں سے خطرات لاحق ہیں

ممبئی کے جنوبی علاقے میں واقع اسٹیٹ گورنمنٹ کی بلڈنگ کی طرف بڑھتے ہوئے احتجاجی مظاہرے میں شریک صحافیوں نے قتل ہونے والے صحافی ’جیو ترموئی دے‘ کی تصاویر ہاتھوں میں اٹھا رکھی تھیں۔ یہ افراد بھارت کے مشہور Tabloid ’مِڈ ڈے‘ کے مدیر کے قتل میں ملوث عناصر کو کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

’جیو ترموئی دے‘ معاشرے کے جرائم پیشہ عناصر کی سرگرمیوں کے بارے میں بہت کُھل کر لکھا کرتے تھے۔ انہیں گزشتہ ہفتے کے روز بھارت کے اقتصادی اور تفریحی مرکز ممبئی کے شمالی نواحی علاقے ’پو وائی‘ میں دن دھاڑے اُن کے گھر کے نزدیک چار نا معلوم موٹر سائیکل سواروں نے گولی مار کر ہلاک کردیا۔ اطلاعات کے مطابق ہفتے کی دوپہر’جیو ترموئی دے‘ اپنے گھر سے نکلے ہی تھے کہ موٹر سائیکل سواروں نے ان پر پیچھے سے حملہ کیا اور ان کے جسم کو گولیوں سے چھلنی کر دیا۔ بھارتی صحافی کو پانچ گولیاں لگیں۔56 سالہ ’جیو ترموئی دے‘ کو فوراً ہی ہسپتال پہنچا دیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے ان کی موت کی تصدیق کر دی۔

Polizei und Sicherheitskräfte in Moradabad Indien

لوکل پولیس قابل بھروسہ نہیں: بھارتی صحافی

اب تک کسی بھی مجرم کو گرفتار نہیں کیا گیا ہے تاہم پولیس اس بارے میں جانچ پڑتال کر رہی ہے کہ کیا اس مجرمانہ کارروائی کے پیچھے ’ آئل مافیا‘ کا ہاتھ ہو سکتا ہے۔ ’مِڈ ڈے‘ کے مدیر ’دے‘ نے ایسے جرائم پیشہ گروہوں کے بارے میں متعدد آرٹیکلز لکھے تھے، جو حکومت کی طرف سے سبسیڈائزڈ شدہ مٹی کے تیل کو ٹینکروں سے چوری کر کے مہنگے داموں بازار میں بیچا کرتے ہیں۔

دریں اثناء خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو ایک بیان دیتے ہوئے ایک صحافی ’جیتن دسائی‘ نے کہا ’ہم چاہتے ہیں کہ ’مِڈ ڈے‘ کے ایڈیٹر ’جیو ترموئی دے‘ کے قتل کی تفتیش ’سینٹرل بیورو آف انوسٹیگیشن‘ سی بی آئی کرے۔ ہمیں مقامی پولیس پر قطعاً اعتبار نہیں ہے‘۔ اس صحافی نے مزید بتایا کہ گزشتہ چند سالوں سے اس ریاست میں 125 صحافیوں کو دھمکیاں دی گئیں یا ان پر حملے کیے گئے تاہم ان کارروائیوں میں ملوث افراد کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا گیا۔

Indien CBI Untersuchung

بھارت کے’سینٹرل بیورو آف انوسٹیگیشن‘ سی بی آئی کی ایک تفتیشی کارروائی

دریں اثناء امید کی جا رہی ہے کہ مقامی میڈیا غالباً اس معاملے کو ممبئی ہائی کوررٹ میں اٹھائے گا اور اس بارے میں وفاقی سطح پر چھان بین کا مطالبہ کیا جائے گا۔ انگریزی زبان میں چھپنے والے مختصر اخبار ’ مِڈ ڈے‘ کے مطابق مقتول صحافی ’جیو ترموئی دے‘ گزشتہ 22 برس سے اس اخبار کے لیے بحیثیت ’ تفتیشی رپورٹٹنگ ایڈیٹر‘ کام کر رہے تھے۔

رپورٹ: کشور مصطفیٰ

ادارت: عدنان اسحاق

DW.COM

ویب لنکس