1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

بھارت میں میرے مداح کی گرفتاری شرم ناک ہے، شاہد آفریدی

پاکستانی کرکٹ آل راؤنڈر شاہد آفریدی کا احتجاجاً کہنا ہے بھارت کی جانب سے ایک نوجوان کو آفریدی کے نام والی ٹی شرٹ پہننے پر گرفتار کيا جانا، ایک شرم ناک عمل ہے۔

نیوز ایجنسی اے ایف پی کے مطابق اکیس سالہ ریپن چوہدری کو گزشتہ اتوار کے روز  شمال مشرقی ریاست آسام سے اس لیے گرفتار کر لیا گیا تھا کیوں کہ ’اس کی ٹی شرٹ نے ہندو بنیاد پرست گروہ کو ناراض کر دیا تھا۔‘

ایک شخص نے اپنا نام نہ ظاہر کرتے ہوئے اے ایف پی کو بتایا، ’’اس نوجوان کے خلاف ایک مقامی دائیں بازو کے گروہ نے شکایت درج کرائی تھی، ہم نے اسے گرفتار کر لیا اور پھر اسے فوری طور پر ضمانت پر رہا بھی کر دیا گیا تھا۔‘‘

پاکستانی کرکٹر شاہد آفریدی کے جاندار چھکوں اور بے دھڑک بلے بازی نے انہیں عالمی سطح پر شہرت دلائی ہے اور ان کے کئی مداح ہیں۔ شاہد آفریدی نے اے ایف پی کو بتایا،’’ میرے ایک مداح کو میرے نام کی ٹی شرٹ پہننے پر گرفتار کرنا شرم ناک ہے، مہذب افراد کو ایسے عمل زیب نہیں دیتے۔‘‘

 شاہد آفریدی نے کہا کہ پاکستان اور بھارت میں کرکٹ کے مداح دونوں ممالک کے تعلقات سے بڑھ کر کرکٹ سے محبت کرتے ہیں اور ایک دوسرے کے ملکوں کے کھلاڑیوں کو پسند کرتے ہیں۔ شاہد آفریدی نے کہا کہ کھیل اور سیاست کو الگ رکھنا چاہیے۔

Cricket World Cup Spiel zwischen Indien und Pakistan (Saeed Khan/AFP/Getty Images)

اسی برس جنوری میں ایک پاکستانی کو اپنے گھر میں بھارت کا جھنڈا لہرانے کے جرم میں گرفتار کر لیا گیا تھا

شاہد آفریدی ماضی میں خود بھی اس وقت مشکل میں آ گئے تھے جب  انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ انہیں پاکستان سے زیادہ بھارت میں مداحوں سے محبت ملتی ہے۔

اسی برس جنوری میں ایک پاکستانی کو اپنے گھر میں بھارت کا جھنڈا لہرانے کے جرم میں گرفتار کر لیا گیا تھا، جسے بعد میں رہا کر دیا گیا تھا۔

پاکستان  اور بھارت کے درمیان تعلقات میں کشیدگی اس برس ستمبر کے ماہ میں مزید بڑھ گئی جب بھارت میں پاک بھارت سرحدی علاقے پر ہونے والے حملے کا ذمہ دار پاکستان کو ٹہرایا۔ اس حملے میں 18 بھارتی فوجی ہلاک ہو گئے تھے۔ پاکستان اور بھارت کے درمیان کرکٹ میچ بھی کسی تیسرے ملک میں منعقد کیے جاتے ہیں۔

DW.COM