1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

بھارت میں فنون لطیفہ سے متعلق نیا بین الاقوامی میلہ

بھارت میں فنون لطیفہ کے ترقی کرتے منظرنامے پر ایک نئی بین الاقوامی تقریب منعقد ہونے جا رہی ہے۔ Biennale کے نام سے یہ میلہ بھارت کے جنوبی ساحلی علاقے میں منعقد کیا جائے گا جس میں 60 بین الاقوامی فنکار شرکت کریں گے۔

default

ہر دو سال بعد منعقد ہونے والا یہ میلہ گزشتہ بار وینس میں منعقد ہوا تھا

بھارت میں اپنی نوعیت کی یہ پہلی تقریب ہو گی جس میں دنیا بھر کے فنکار تین ماہ تک جاری رہنے والے اس شو میں اپنے فن کا مظاہرہ کریں گے۔ Kochi-Muziris Biennale کے نام سے اس میلے کا انعقاد اگلے برس جنوری میں کیا جائے گا۔

53 Biennale Venedig Irina Korina Flash-Galerie

وینس باینالے میں رکھا گیا ایک شاہکار

دو فنکاروں، بوس کرشنا مچھاری اور ریاس کومو کے پیش کردہ اس خیال کو عملی جامہ پہنانے کے لیے مالی مدد ریاست کیرالہ کی حکومت نے فراہم کی ہے۔ اس میلے کے سلسلے میں بھارت کے صنعتی علاقے کوچی کے علاوہ اس سے 30 کلومیٹر کے فاصلے پر قدیم بندرگاہی شہر موزیرِس میں بھی مختلف نمائشوں کا انعقاد کیا جائے گا۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے پیشے کے لحاظ سے مصور اور فوٹوگرافر کوموکا کہنا تھا کہ وہ ہمیشہ سے چاہتے تھے کہ بین الاقوامی آرٹ کو بھارت میں لایا جائے اور ان کے خیال میں اس کے لیے Biennale ایک بہترین موقع فراہم کرتا ہے۔

53 Biennale Venedig Giampaolo Bertozzi Flash-Galerie

اٹلی کی جانب سے باینالے میں رکھا گیا ایک نمونہ

انہوں نےاس شو کے حوالے سے مزید بتایا کہ اس میں شرکت کے لیے پاکستان اور چین سمیت مختلف ممالک میں فنون لطیفہ کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والےفنکاروں کو شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔

اس شو کی ایک خاص بات یہ بھی ہے کہ اس میں شرکت کے لیے صرف عالمی شہرت یافتہ فنکاروں کو ہی دعوت نہیں دی گئی ہے بلکہ ایسے نوجوان فنکاروں کا بھی انتخاب کیا گیا ہے جو زیادہ شہرت تو نہیں رکھتے لیکن ان میں آگے بڑھنے کی صلاحیت بدرجہ اتم موجود ہے۔

اس شو کو منعقد کرنے کے لیے کوچی کے انتخاب کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ اپنی خوبصورتی کے علاوہ مذہبی اور ثقافتی کردار کے امتزاج کی بنیاد پر یہ اس تقریب کے لیے یہ جگہ نہایت موزوں ہے۔جبکہ قدیم بندرگاہی مقام موزیرِس میں قائم خوبصورت اور قدیم عمارات کا استعمال اس تقریب کو ایک خوبصورت رنگ بخشے گا۔

بھارت میں 100 ملین روپے یعنی قریب دو ملین یورو کے مساوی بجٹ کے حامل اس میلے کے لیے امید کی جا رہی ہے کہ اس تقریب کا شمار، جرمنی کے برلینالے، سوئٹزرلینڈ کے بیسل شو، وینس کے میلے اور شنگھائی آرٹ فیئر جیسے بین الاقوامی تقریبات میں ہونے لگے گا۔

رپورٹ: عنبرین فاطمہ

ادارت: افسر اعوان

DW.COM