1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

بھارت میں ریکارڈ توڑگرمی، سورج آگ برسانے لگا

شمالی بھارت کا شہر پھلودی آج کل شدید گرمی کی لپیٹ میں ہے، جہاں درجہ حرارت 51 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا ہے۔ بھارتی محکمہ موسمیات کے مطابق یہ ملک میں اب تک ریکارڈ کیا جانے والا سب سے زیادہ درجہ حرارت ہے۔

Indien Unwetter Hitze

بھارت کے شہر پھلودی میں درجہ حرارت 51 ڈگری تک پہنچ گیا ہے

بھارتی صحرائی ریاست راجستھان کے شہر پھلودی میں 123.8 فارن ہائٹ نے ملک بھر میں گرمی کا اب تک کا ریکارڈ توڑ دیا ہے۔ اس سے قبل بھارت میں سن 1956 میں سب سے زیادہ درجہ حرارت 50.6 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا تھا۔

بھارتی محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر بی پی یادو نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ جمعرات پھلودی میں بھارت کی تاریخ کا گرم ترین دن تھا۔

شمالی بھارت میں مئی اور جون عام طور پر سال کے گرم ترین مہینوں میں شمار ہوتے ہیں، جب یہاں درجہ حرارت چالیس ڈگری سے اوپر چلا جاتا ہے لیکن درجہ حرارت کا 50 ڈگری سینٹی گریڈ سے تجاوز کر جانا غیر معمولی ہے۔

بھارت کے محکمہ موسمیات کے مطابق اس ہفتے کے آخر میں ملک کے شمالی اور مغربی علاقے شدید گرمی کی لپیٹ میں رہیں گے۔ سخت گرمی سے متاثرہ علاقوں میں مغربی ریاست گجرات اور راجستھان کے علاوہ وسطی ریاست مدھیہ پردیش کے کچھ علاقے بھی شامل ہیں۔ حکام کے مطابق آئندہ دو روز میں ان علاقوں میں درجہ حرارت سینتالیس ڈگری سینٹی گریڈ تک یا پھر اس سے بھی تجاوز کر سکتا ہے۔

Indien Hitzewelle

بھارتی حکام کے مطابق اس سال ملک میں گزشتہ سالوں کی نسبت زیادہ گرمی پڑے گی

اسی دوران حکام نے عوام کو موسم کی شدت سے بچنے کے لیے احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔ بھارت پہلے ہی خبردار کر چکا ہے کہ اس سال ملک میں زیادہ گرمی پڑے گی اور گرم علاقوں میں درجہ حرارت گزشتہ سالوں سے اوسطاً 5 ڈگری زیادہ ہو سکتا ہے۔

یاد رہے کہ بھارت میں اس برس اپریل کے اوائل سے ہی گرمی کی شدت میں اضافہ ہو گیا تھا، جب موسم گرما کی ابتدائی لہر کی وجہ سے بھارت کی جنوبی ریاستوں تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں کم از کم چورانوے افراد لقمہ اجل بن گئے تھے۔

DW.COM