1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

بھارت میں تمباکو نوشی پر پابندی ممکن ہے؟

بھارتی سرکارنے عوامی مقامات پرتمباکو نوشی کو ممنوعہ قرار دے دیا ہے لیکن کئی ماہرین کا کہنا ہے کہ اس قانون کے اطلاق میں مشکلات حائل ہو سکتی ہیں۔ تاہم دیکھنا ہے کہ دو اکتوبر سے لاگو ہونے والا یہ قانون کس حد موثر ہوتا ہے۔

default

بھارت میں عوامی مقامات تمباکونوشی پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ دو اکتوبر سے عمل میں آنے والی اس پابندی پر عوام اور سول سوسائٹی کی سطح پر ملا جلا سا ردعمل دکھنے میں آرہا ہے۔ تمباکو کے خلاف کام کرنے والے افراد نے اس پابندی کو خوش آئند قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ اگرچہ اس پابندی کو بہت دیر بعد متعارف کروایا گیا ہے تاہم اس پابندی سے تمباکو کے استعمال سے بیمار اور ہلاک ہونے والوں کی تعداد میں کمی واقع ہو سکے گی۔

بھارتی حکومت کی طرف سے اس پابندی میں عوامی مقامات ، دفاتر کی عمارات، ہوٹلز، ریستورانوں ، سنیماگھر اور بس سٹاپوں پر تمباکو نوشی کو ممنوعہ قرار دیا ہے۔ اوراگر کوئی شخص ان مقامات پر سگریٹ پیتے ہوئے پایا گیا تو اس پر 200 روپے کا جرمانہ عائد کیا جائےگا۔

واضح رہے کہ بھارت میں تمباکو نوشی پر پابندی کا قانون سن دو ہزار تین میں منظور کر لیا گیا تھا اور عوامی مقامات پر یہ پابندی سن دو ہزار چار سےعمل میں آنا تھی تاہم انتظامی وجوہات کی بنا پر اس قانون کو عملدرآمد کروانے میں تاخیر ہوئی۔

Audios and videos on the topic