1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

بھارت میں امریکی سفیر، روئمر کی جانشین پاول

امریکی صدر باراک اوباما نے پیشہ ور خاتو‌ن سفارتکار اور جنوبی ایشیا کے امور کا وسیع تجربہ رکھنے والی ماہر نینسی پاول کو بھارت میں امریکہ کی نئی سفیر نامزد کر دیا ہے۔

default

اپریل میں مستعفی ہو جانے والے سابق سفیر ٹموتھی روئمر

بھارت میں امریکی سفیر کا عہدہ اس سال اپریل سے خالی تھا۔ نینسی پاول پاکستان اور نیپال میں امریکی سفیر کے فرائض انجام دے چکی ہیں۔ سفارتی حلقوں میں انہیں ایک ’کیریئر ایمبیسیڈر‘ قرار دیا جاتا ہے۔ یہ اعزاز بہت کم اور صرف ایسے سفارتکاروں کو دیا جاتا ہے جنہوں نے اعلیٰ سفارتی عہدوں پر نمایاں خدمات انجام دی ہوں۔

نینسی پاول کی بھارت میں نئے سفیر کے طور پر تقرری سے متعلق اپنے ایک بیان میں امریکی صدر اوباما نے کہا کہ وہ اپنے وسیع تجربے کے ساتھ بھارت میں سفارتی ذمہ داریاں بہت اچھے طریقے سے انجام دے سکیں گی۔

Barack Obama Erklärung zu Gaddafi

امریکی صدر باراک اوباما

ماضی میں سفارتکاروں کی تقرری کے حوالے سے امریکہ کے کئی صدر زیادہ تر سیاست دانوں کو ہی نئی دہلی میں واشنگٹن کے سفیر مقرر کرتے رہے ہیں تاکہ دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کی اہمیت کو سیاسی طور پر مزید نمایاں کیا جا سکے۔

تاہم اس مرتبہ صدر اوباما نے ایک تجربہ کار اور پیشہ ور سفارتکار کی تقرری کو ترجیح دی ہے۔ باراک اوباما نے اس سے پہلے امریکی کانگریس کے ایک سابق رکن ٹموتھی روئمر کو بھارت میں امریکی سفیر مقرر کیا تھا۔

انہوں نے اس سال مارچ میں اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ ٹموتھی روئمر نے اپنے استعفے کی وجہ یہ بتائی تھی کہ انہوں نے اپنی تقرری کے وقت صرف اس بات پر اتفاق کیا تھا کہ وہ محض دو سال کے عرصے تک بھارت میں امریکی سفیر کے فرائض انجام دیں گے۔

رپورٹ: عصمت جبیں

ادارت: عاطف بلوچ

DW.COM

ویب لنکس