1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

بھارت: بین البراعظمی بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ

بھارت نے پیر کے روز طویل ترین فاصلے تک مار کرنے والے میزائل ’اگنی فائیو‘ کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے۔ بھارتی حکام کے مطابق یہ میزائل ایٹمی وار ہیڈ لے جانے کی بھی صلاحیت رکھتا ہے۔

بھارتی حکام کے مطابق ان کا یہ جوہری میزائل پانچ ہزار کلومیٹر تک اپنے ہدف کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ بھارت میں دفاعی تحقیق اور ترقی کی تنظیم کے ایک ترجمان منیش بھردواج کا کہنا تھا کہ ٹھوس ایندھن سے پرواز کرنے والے میزائل کو بھارت مشرقی ساحلی خلیج بنگال کے کالام جزیرہ سے لانچ کیا گیا۔

بھارتی حکام کے مطابق اگنی پانچ نامی میزائل 17 میٹر طویل ہے اور اس کا وزن 50 ٹن ہے۔ یہ میزائل ایٹمی وار ہیڈ چین کے تمام حصوں کے ساتھ ساتھ مغربی یورپ تک کے تمام ممالک میں اپنے ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔ عسکری ماہرین کے مطابق بھارت نے اگنی میزائل پروگرام اپنے روایتی حریف پاکستان اور پھر چین کو سامنے رکھتے ہوئے ترتیب دیا ہے۔ اس میزائل نظام میں درمیانے درجے سے طویل درجے تک مار کرنے والے میزائل شامل ہیں۔

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے اس موقع پر اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا ہے، ’’اگنی فائیو کے کامیاب تجربے پر ہر بھارتی کو بہت فخر ہے۔  یہ ہماری اسٹریٹجک دفاعی طاقت میں زبردست اضافہ کرے گا۔‘‘

بھارت کا اگنی ون سات سو کلومیٹر تک اپنے ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔ اگنی ٹو کی رینج دو ہزار کلومیٹر تک ہے۔ اگنی تھری اور اگنی فور کی رینج ڈھائی ہزار سے ساڑھے تین ہزار کلومیٹر تک ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق زمین سے زمین تک اپنے ہدف کو نشانہ بنانے والے اس میزائل میں جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا گیا ہے اور اس کا پتا چلانا بھی آسان نہیں ہوگا۔ بتایا گیا ہے کہ اگنی فائیو کو جلد ہی بھارتی فوج کے حوالے کر دیا جائے گا۔