1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

بھارتی ایئر لائن 205 بوئنگ ہوائی جہاز خریدے گی

بھارت کی ایک ہوائی کمپنی نے دو سو پانچ بوئنگ طیارے خریدنے کا اعلان کیا ہے۔ بھارت کی شہری ہوا بازی کی تاریخ میں اس معاہدے کو ایک انتہائی بڑی تجارتی سرگرمی قرار دیا گیا ہے۔

بھارت کی پرائیویٹ ایئر لائن اسپائس جیٹ کی بوئنگ طیارے خریدنے کی ڈیل بائیس ارب امریکی ڈالر کے برابر ہے۔ اس فضائی کمپنی کے چیئرمین اجے سنگھ کے بقول اسپائس جیٹ نے اِس انتہائی اہم اور بڑی ڈیل کو حتمی شکل دے دی ہے۔ انہوں نے اسے بھارتی شہری ہوابازی کی تاریخ کا بھی ایک اہم ترین اور بڑا کاروباری سودا قرار دیا ہے۔ اجے سنگھ کے مطابق بھارت اور بوئنگ کمپنی کے درمیان بھی یہ اب تک کا سب سے بڑا معاہدہ ہے۔

 اسپائس جیٹ کے چیئرمین نے بتایا کہ اب اُن کی کمپنی بھارت کے اندر اور بیرون ملک اپنے آپریشن اور پروازوں کے سلسلے کو وسعت دینے کی پوزیشن میں آ گئی ہے۔ بھارتی فضائی کاروبار کے مجموعی حجم میں اسپائس جیٹ کا حصہ تیرہ فیصد ہے۔

بھارتی مالی منڈی پر نگاہ رکھنے والے تجزیہ کار کپل کول کا کہنا ہے کہ اسپائس جیٹ کے لیے یہ ڈیل انتہائی اہمیت کی حامل ہے کیونکہ ایک وقت تھا کہ جب یہ ایئر لائن  دیوالیہ ہونے کے قریب تھی اور پھر  اِسے خسارے سے نکال کر اور منافع بخش بنا کر 205 بوئنگ مسافر بردار ہوائی جہاز خریدنے کا فیصلہ کیا گیا۔ کول کے مطابق ایئر لائن کی نتظامیہ اس کامیاب سودے پر مبارک باد کی مستحق ہے۔

Indien New Delhi - Air India Flugzeug im Landeanflug Indira Gandhi International Airport (picture-alliance/AP Photo)

 بھارت میں اسپائس جیٹ کا مارکیٹ میں مقام انڈیگو، جیٹ ایئر ویز اور ایئر انڈیا کے بعد آتا ہے

ایسے اندازے بھی لگائے گئے ہیں کہ اسپائس جیٹ نے مستقبل کی طویل المدتی منصوبہ بندی کے تحت بوئنگ طیاروں کا سودا کیا ہے اور یہ کمپنی یقینی طور پر خلیج میں بھی اپنا جال بچھانے کی کوشش کرے گی۔ اگر وہ اپنی پلاننگ میں کامیاب ہو گئی تو اتنے بڑے فلیٹ کے ساتھ وہ بھارتی ایئر ٹریفک پر غلبہ خاصل کرنے کی پوزیشن میں آ سکتی ہے۔

 بھارت میں اسپائس جیٹ کا مارکیٹ میں مقام انڈیگو، جیٹ ایئر ویز اور ایئر انڈیا کے بعد آتا ہے۔ یہ بھی اہم ہے کہ سستی پروازیں پیش کرنے والی ہوائی کمپنیوں میں اسپائس جیٹ وہ واحد کمپنی ہے، جس کے فلیٹ میں بوئنگ طیارے شامل ہونے جا رہے ہیں۔ بھارتی معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ  عالمی منڈیوں میں تیل کی کم قیمتوں نے بھارت کے اندر سستے کرایوں والی ہوائی کمپنیوں کے کاروبار کو فروغ دیا ہے۔ گزشتہ برس بھارت میں ہوائی کمپنیوں کے مسافروں کی تعداد میں اکیس فیصد اضافہ دیکھا گیا ہے۔