1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

بن لادن کی ہلاکت پر ہالی وڈ فلم کی منظوری

امریکی فلم ساز ادارے کولمبیا پکچرز کے مطابق اس کو اسامہ بن لادن کی ہلاکت سے متعلق فلم کی ڈسٹریبیوشن کے حقوق مل گئے ہیں۔

default

اسامہ بن لادن

القاعدہ کے سربراہ اور دنیا کے سب سے مطلوب دہشت گرد اسامہ بن لادن کی ہلاکت کے موضوع پر فلم کیتھرن بگیلو کی ہدایت میں بنے گی۔ کیتھرن اس سے قبل سن دو ہزار دس میں ’دا ہرٹ لاکر‘ نامی فلم بنا چکی ہیں جس پر انہیں آسکر انعام بھی ملا تھا۔ یہ فلم عراق کی جنگ کے موضوع پر تھی۔

Oscarverleihung 2010 Kathryn Bigelow Beste Regie

کیتھرن بگیلو آسکر انعام وصول کرتے ہوئے

کیتھرن اور مارک بول القاعدہ کے سربراہ کی ہلاکت سے متعلق اسکرپٹ پر بن لادن کی موت سے قبل ہی کام کرنا شروع کر چکے تھے۔

بن لادن کو دو مئی کو پاکستانی شہر ایبٹ آباد میں امریکی افواج نے غیر معمولی آپریشن کر کے ہلاک کیا تھا۔

سونی پکچرز انرٹینمنٹ کی ایمی پاسکل کا کہنا ہے کہ بگیلو اور بول سن دو ہزار آٹھ سے اس اسکرپٹ پر کام کر رہے ہیں، اور اب وہ بن لادن کی موت کے حوالے سے سامنے آنے والے نئے حقائق کو بھی استعمال کریں گے۔ پاسکل کے مطابق بن لادن کی ہلاکت کے بعد یہ فلم اور بھی اہمیت اختیار کر گئی ہے۔

Szenenbild aus dem Film Tödliches Kommando

’دا ہرٹ لاکر‘ کیا ایک منظر

کیتھرن بگیلو کو سن دو ہزار دس میں آسکر ایوارڈز جیت کر آسکرز جیتنے والی پہلی خاتون ہدایت کار بننے کا اعزاز حاصل ہوا تھا۔ ان کی اس نئی فلم سے فلم بینوں کو بہت توقعات ہیں۔

واضح رہے کہ بھارت میں اسامہ بن لادن پر حال ہی میں ایک مزاحیہ فلم بنائی گئی تھی جس کا نام ’تیرے بن لادن’ تھا۔ اس فلم میں پاکستانی گلوکار اور اداکار علی ظفر نے کام کیا تھا۔ مذکورہ فلم پاکستان میں بین کر دی گئی تھی۔

رپورٹ: شامل شمس⁄ خبر رساں ادارے

ادارت: عدنان اسحاق