1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

بل فائٹنگ ، ثقافتی رنگ یا ظالمانہ شوق

بل فائٹنگ کو ہسپانوی ثقافت کا قدیم اور روایتی حصہ قرار دیا جاتا ہے جب کہ مخالفین اِس کو ظلم اور جبر کا ایک انداز گردانتے ہیں۔ دنیا کے چند ملکوں میں یہ خاصا مقبول کھیل سمجھا جاتا ہے۔

default

ہسپانوی دارالحکومت میڈرڈ میں جانوروں کے حقوق کی پچاس تنظیموں سے وابستہ ہزاروں افراد نے بل فائٹنگ کے خلاف ایک مظاہرے میں حصہ لیا۔ مظاہرین حکومت سے مطالبہ کر رہے تھے کہ اِس کھیل کو کالعدم قرار دیا جائے۔ دوسری جانب اِس کھیل کے شوقین قدامت پسند طبقے کا حکومت سے مطالبہ ہے کہ اِس کو ہسپانوی ثقافتی ورثے کا حصہ قرار دیا جائے۔

Stierrennen in Pamplona Spanien Stierkampf

سپین کے شہر پامپلونا میں گلیوں میں بھینسے دوڑانے کا میلہ منعقد کیا جاتا ہے

بل فائٹنگ کے خلاف مظاہرہ کرنے والے ہزاروں افراد میں بیشتر نوجوان تھے اور اُن کی عمریں تیس سال سے کم تھیں۔ اِس بڑے مظاہرے کی ایک وجہ میڈرڈ کی علاقائی حکومت کی سربراہ Esperanza Aguirre کا وہ پلان بھی ہو سکتا ہے جس کے تحت وہ بل فائٹنگ کو علاقے کے ثقافتی ورثے کا حصہ قرار دینے کی مہم جاری رکھے ہوئے ہیں۔ اُن کا کہنا ہے کہ یہ کھیل عظیم مصور گویا کے لئے انسپیریشن کا باعث بنا تھا اور ڈرامہ نگار ’اورسن ویلز‘ اور ناول نگار ’ارنسٹ ہیمنگوے‘ کے شاہکاروں کا حصہ ہے۔ میڈرڈ کی علاقائی حکومت کی سربراہ نے بل فائٹنگ کو آرٹ کا حصہ قرار دیا۔

ارنسٹ ہیمنگوے نے اپنی کتاب’ ڈیتھ ان دی آفٹرنون‘ میں بُل یا بھینسےسے مقابلہ کرنے والے کو آرٹسٹ یا فنکار قرار دیا تھا۔ سپین میں جنرل فرانکو کے آمرانہ دور میں بل فائٹنگ کو قومی یک جہتی کے لئے بھی فروغ دیا گیا تھا۔ اُسی دور میں اِس کی مقبولیت کے قومی سطح پر بڑے بڑے پلان بنائے گئے تھے۔

یورپی ملک سپین میں جانوروں کے حقوق کی ایک سرگرم کارکن Mireya Barbeto کا تعلق بل فائٹنگ کی مخالفت کرنے والی ایک سیاسی جماعت PACMA سے ہے۔ اُن کا کہنا ہے کہ ظلم یا ٹارچر کو کلچر نہیں کہا جا سکتا۔ اُن کا مزید کہنا ہے کہ سپین میں اِس انداز میں جانوروں پر ظلم قومی شرمندگی کا باعث ہے۔

Chrissie Hynde protestiert mit

جانوروں کے حقوق کے لئے منعقدہ ایک مظاہرہ

یہ ایک دلچسپ امر ہے کہ ہسپانوی صوبے کیٹا لونیا نے اٹھارہ دسمبر سن دو ہزار نو میں بل فائٹنگ کو غیر قانونی قرار دے کر پابندی عائد کردی تھی۔ پارلیمنٹ نے یہ فیصلہ ایک عوامی مہم کے نتیجے میں کیا تھا۔ کیٹا لونیا کی پارلیمنٹ کے فیصلے کو ہسپانوی میڈیا کی خاصی تنقید کا سامنا رہا۔

بل فائٹنگ سپین کے علاوہ پرتگال اور اِن دونوں ملکوں کی نوآبادیاتی کالونیوں یا ملکوں میں بھی مشہور سپورٹ کا درجہ رکھتا ہے۔ پرتگال میں میدان کے اندر بُل یا بھینسےکو مارنا غیر قانونی ہے۔ پرتگال کے ایک پرائیویٹ ٹیلی ویژن چینل نے بل فائٹنگ کو یہ کہہ کر دکھانا بند کردیا کہ یہ بچوں میں تشدد کو ابھارنے کا باعث بن سکتا ہے۔ بھارتی صوبے تامل ناڈو میں بھی بل فائٹنگ سے ملتا جلتا ایک انداز پرانے وقتوں سے مخصوص دن پر کھیلا جاتا ہے۔

رپورٹ : عابد حسین

ادارت : شادی خان سیف