1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

بلوچستان میں فائرنگ کا واقعہ، پانچ افراد ہلاک

پاکستان کے جنوب مغربی صوبے بلوچستان میں مسلح افراد نے فائرنگ کر کے شیعہ مسلمانوں کو نشانہ بنایا۔ بتایا گیا ہےکہ اس واقعے میں تین شیعہ مسلمانوں سمیت پانچ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

بتایا گیا ہے کہ ایک موٹرسائیکل پر سوار دو مسلح حملہ آوروں نے شیعہ سبزی فروشوں کی ایک گاڑی پر اس وقت فائرنگ کی، جب وہ صوبائی درالحکومت کوئٹہ سے نکل رہی تھی۔

مقامی پولیس اہلکار ان سبزی فروشوں کی گاڑیوں کو پولیس کا تحفظ حاصل ہوتا ہے، تاہم آج ان میں سے ایک گاڑی تاک کر کی گئی فائرنگ کا نشانہ بنی۔ مقامی پولیس افسر عبدالرزاق چیمہ کے مطابق یہ گاڑی پولیس کے ہم راہ چلنے والے قافلے سے الگ ہو گئی تھی۔

جھل مگسی میں مزار پر خود کش حملہ، ہلاکتوں کی تعداد اب چوبیس

کوئٹہ کے قریب بس اور وین میں تصادم، کم از کم تیرہ افراد ہلاک

جھل مگسی ميں خونريز حملہ، داعش نے ذمہ داری قبول کر لی

چیمہ نے بتایا کہ اس حملے میں ہزارہ شیعہ اقلیت سے تعلق رکھنے والے تین افراد مارے گئے، جب کہ واقعے میں گاڑی کا ڈرائیور اور ایک راہ گیر بھی ہلاک ہو گیا۔ اس حملے میں ایک سبزی فروش گولیاں لگنے سے شدید زخمی ہو گیا، جسے تشویش ناک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا۔

ایک اور مقامی پولیس افسر نصیب اللہ نے بھی اس واقعے اور ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے۔ دونوں پولیس اہلکاروں نے اس واقعے کو فرقہ واریت کے تناظر میں کی گئی کارروائی قرار دیا۔

ویڈیو دیکھیے 01:35

یہ بلوچ تارک وطن جرمنی کیوں آنا چاہتا ہے؟

فی الحال کسی گروپ یا تنظیم کی جانب سے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی ہے، تاہم ماضی میں ہزارہ اقلیت پر ہونے والے حملوں میں طالبان عسکریت پسند ملوث رہے ہیں۔

پاکستان کی قریب دو سو ملین آبادی میں شیعہ اقلیت کا تناسب بیس فیصد ہے اور اس برادری کو فرقہ ورانہ سنی تنظیموں اور عسکریت پسندوں کی جانب سے حملوں کا سامنا رہتا ہے۔

DW.COM

Audios and videos on the topic

ملتے جلتے مندرجات