1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

برطانوی مصفنہ مانٹل نے بُکر پرائز جیت لیا

برطانوی مصنفہ ہلیری میری مانٹل نے رواں برس کا بُکر پرائز برائے ناول نویسی جیت لیا ہے۔ انہیں یہ اعزاز ان کے تاریخی ناول 'وولف ہال' کے لئے دیا گیا ہے۔ اس پرائز کے لئے چھ مصنفین کے ناولوں کو شارٹ لسٹ کیا گیا تھا۔

default

برطانیہ کی 57 سالہ مصفنہ ہلیری میری مانٹل کو ادبی اعزاز بُکر پرائز منگل کو لندن میں منعقدہ ایک تقریب میں دیا گیا ہے۔ یہ تقریب لندن کے گلڈہال میں منعقد ہوئی، ہلیری مانٹل سنہرا لباس زیب تن کئے تقریب میں شریک ہوئیں، جیسے انہیں پہلے سے ہی انعام کا فیصلہ اپنے حق میں ہونے کا یقین ہو۔ اس موقع پر انہیں 50 ہزار پونڈ بھی ادا کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر بُکر پرائز حاصل کرنا ٹرین حادثے کا شکار ہونے کی مانند ہے تو وہ اس وقت انتہائی مسرت سے، خود کو ہوا میں محسوس کر رہی ہیں۔

بُکر پرائز کا اعلان پانچ ججوں پر مشتمل جیوری نے کیا، جس کی قیادت براڈکاسٹر جیمز ناؤٹی کر رہے تھے۔ ناؤٹی نے کہا کہ مانٹل کا ناول اس کے واضح ابتدائیے اوربیان کی تیزی کی وجہ سے منتخب کیا گیا ہے۔ جیوری میں شامل ایک جج نے اسے غیرمعمولی اور جدید ناول قرار دیا۔

Booker Preis Hilary Mantel

سال رواں کا بُکر پرائز جییتنی والی برطانوی مصنفہ ہلیری مانٹل

ناؤٹی نے اس بارے میں کہا کہ یہ کوئی متقفہ فیصلہ نہیں تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسا کبھی کبھی ہی ہوتا ہے لیکن اس فیصلے سے ہر کوئی مطمئن تھا۔

ہلیری مانٹل کا تاریخی ناول 'وولف ہال' انتہائی مقبول رہا ہے، جس میں 16ویں صدی کے کنگ ہنری ہشتم کے دَور کی داستاں بیان کی گئی ہے۔ یہ ناول کنگ ہنری کے انتہائی قریبی مشیر تھامس کروم ویل کی زندگی کے بارے میں ہے۔

کروم ویل اپنے والد کی جانب سے تشدد کا شکار تھے۔ بعدازاں وہ کارڈینل وولسے کے ساتھ کام کرنے لگے اور پھر کنگ ہنری ہشتم کے ایک اہم مشیر بن گئے۔ مانٹل اس کہانی کو آگے بڑھانے کے لئے ایک اور ناول لکھنے کا ارادہ رکھتی ہیں، جس میں 1540ء میں کروم ویل کی سزائے موت کا ذکر ہوگا۔

'وولف ہال' 650 صفحات پر مبنی ناول ہے۔ ہلیری مانٹل نے کہا کہ یہ کتاب لکھنے سے پہلے وہ بہت تذبدب کا شکار تھیں۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ وہ اس کے بارے میں 20 سال تک سوچتی رہیں اور پانچ سال اِس کتاب کی تکمیل پر صرف کئے۔۔

بُکر پرائز جیتنے کے بعد ہلیری مانٹل کی تمام کتابوں کی فروخت میں اضافہ متوقع ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ گزشتہ ماہ کے آخر تک ان کے ناول 'وولف ہال' کی صرف برطانیہ میں 50 ہزار جلدیں فروخت ہو چکی ہیں۔

بُکر پرائز کے لئے دولت مشترکہ میں شامل ممالک اور آئرلینڈ سے انگریزی زبان کے مصنفین کو منتخب کیا جاتا ہے۔ گزشتہ سال یہ پرائز اروند ادیگا کو ان کے ناول 'دی وائٹ ٹائیگر' کے لئے دیا گیا تھا۔

رپورٹ: ندیم گِل

ادارت: عابد حسین

DW.COM