1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

باربی کا بوائے فرینڈ کین پچاس سال کا ہو گیا

اپنی گرل فرینڈ کو کبھی شادی کی پیشکش نہ کرنے اور پختہ عمر میں بھی نو عمر لڑکوں کی طرح کے کپڑے پہنے کے باوجود وہ بچیوں کا پسندیدہ ہے۔ یہ بات ہو رہی ہے، مشہور ترین گڑیا باربی کے بوائے فرینڈ کین کی، جو آج 50 برس کا ہو گیا

default

کین کو اگر دنیا کے کامیاب ترین کھلونوں میں سے ایک قرار دیا جائے، تو بے جا نہ ہو گا۔ اپنی عمر کی نصف صدی مکمل کرنے کے باوجود وہ اب بھی اپنی گرل فرینڈ باربی سے عمر میں کم ہے۔

یہ 1959ء کی بات ہے، جب اس مشہور ترین گڑیا کی خالق رُوتھ ہینڈلر نے باربی گڑیا کو مارکیٹ میں متعارف کروایا تھا۔ اس گڑیا کا نام انہوں نے اپنی بیٹی کے نام پر رکھا تھا۔ تاہم انہوں نے جلد ہی اس بات کو محسوس کیا کہ اس گڑیا کے ایک ساتھی کی موجودگی، باربی گڑیا رکھنے والی بچیوں کو مزید خوش کر سکتی ہے۔ اسی بات کو ذہن میں رکھتے ہوئے انہوں نے اپنے بیٹے کینتھ کے نام کے مخخف کین کے نام سے باربی کے اس ساتھی کو 1961ء میں متعارف کروایا۔

Ruth Handler Erfinderin der Barbie Puppe

باربی اور کین کی خالق رتھ ہینڈلر ایک اداکارہ کے ساتھ

ابتدا میں3.50 ڈالر کی قیمت کے ساتھ متعارف کروائے گئے کین کی شباہت خاصی نسوانی تھی۔ اپنی زرد پھیکی رنگت اور نہایت دبلے جسم کے باعث کین 12 سالہ بچے سے زیادہ مشابہ تھا۔ اپنے آزمائشی مرحلے میں بالوں کے سر سے متعدد بار گر جانے کے بعد بالآخر ہینڈلر نے اس کے سر کو گنجا رکھتے ہوئے اس پر بالوں کی جگہ کتھئی رنگ کا پینٹ کر کے مارکیٹ میں لانے کا فیصلہ کیا۔ تاہم بعد میں اُسے نہ صرف گھنے بالوں بلکہ چوڑے شانوں کے ساتھ ایک مرتبہ پھر متعارف کروایا گیا اور یوں کین زیادہ مردانہ ڈیل ڈول کے ساتھ سامنے آیا۔

سر کے بالوں کے ساتھ کین کو دوبارہ مارکیٹ میں 1970ء کی ابتدا میں لایا گیا۔ 1980ء کے عشرے میں تو اس کے چہرے پر بھی بال تھے، جنہیں بچے گرم پانی کے ساتھ خود شیو کر سکتے تھے۔ اس کے بعد کین کو 40 مختلف پیشوں کے روپ میں متعارف کروایا گیا۔ ان میں سکوبا ڈائیور، لمبے بالوں والے سپر اسٹار، اولمپیئن، اداکار، پائلٹ اور ریس ڈرائیور جیسے روپ بھی شامل ہیں۔

Mädchen bestaunt Barbiepuppe

دنیا بھر میں باربی اور کین کی مقبولیت آج بھی برقرار ہے

باربی اور کین کی کہانی کے مطابق ان دونوں کی ملاقات فلم بندی کے موقع پر ہوئی۔ تب سے یہ دونوں ایک ساتھ ایک طویل عرصے تک رہے۔ تاہم 2004ء میں کھلونے بنانے والی فیکٹری میٹل نے اعلان کیا کہ اب ان دونوں میں جدائی ہو گئی ہے، جس کے بعد کین مارکیٹ سے غائب ہو گیا۔

تاہم 50 ویں سالگرہ کے ساتھ ہی کین کی واپسی ہو گئی ہے اور میٹل کمپنی کے مطابق باربی نے اس کو ایک بار پھر قبول کر لیا ہے۔ اس موقع پر متعارف کروایا گیا کین کا ایک ورژن ایسا بھی ہے، جو اپنے اندر لگائی گئی ایک مائیکرو چپ کے ذریعے لفظ ’شکریہ‘ بھی بول سکتا ہے۔

رپورٹ: عنبرین فاطمہ

ادارت: امجد علی

DW.COM