1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

ایک درجن سے زائد پولیس اہلکار چوری کے جرم میں گرفتار

وسطی امریکی ملک میکسیکو کے حکام نے پولیس کے پندرہ اہلکاروں کو چوری کے الزام کے تحت گرفتار کر لیا ہے۔ ان کی گرفتاری میں سکیورٹی کیمروں کی ریکارڈنگ سے مدد لی گئی تھی۔

میکسیکو کے دارالحکومت سے دفتر استغاثہ نے بتایا ہے کہ جن پندرہ پولیس اہلکاروں کو حراست میں لیا گیا ہے، اُن پر غیرقانونی تلاشی، ڈاکہ زنی اور اختیارات کے ناجائر استعمال کے الزامات پر مبنی فرد جرم عائد کر دی گئی ہے۔

برقعے پر پابندی: آسٹرین پولیس متذبذب، ’شارک مچھلی‘ پریشان

افغان طالبان کی لڑائی کا رخ اب سیدھا پولیس اور فوج کی طرف

بچوں کی خوراک میں زہر شامل کرنے والا مشتبہ شخص گرفتار

جنسی استحصال کرنے پر آسٹریلوی پولیس کے 26 اہلکار برطرف

ان پندرہ پولیس افسران کو سکیورٹی کیمروں کی ریکارڈنگ کی مدد سے حراست میں لیا گیا۔ وہ پولیس کی گشت کرنے والی  تین کاروں پر سوار ہو کر ایک بڑی نجی جائیداد تک پہنچے تھے۔ کیمروں کی خفیہ ریکارڈنگ میں حکام نے پولیس پٹرول کاروں میں سے اترنے والے ان پولیس اہلکاروں کو لوٹ مار کرتے دیکھا۔

Mexiko Gendarmerie (Getty Images/AFP/Y. Cortez)

پولیس اہلکار تین گشتی کاروں پر سوار ہو کر چوری کے لیے پہنچے

میکسیکو سٹی کے دفتر استغاثہ کے مطابق کیمروں کی ریکارڈنگ میں واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ اہلکار اس وسیع مکان میں داخل ہو کر اندر سے گھریلو ضرورت کا سامان باہر لا کر کاروں کے اندر رکھ رہے ہیں۔ انہوں نے مکان کے اندر سے قیمتی پرندے بھی اٹھا کر اُن سرکاری گاڑیوں میں رکھے، جن پر سوار ہو کر وہ پہنچے تھے۔

پولیس حکام نے چوری کی رپورٹ درج کرائے جانے کے بعد جب نصب خفیہ سکیورٹی کیمروں کی ریکارڈنگ کی جانچ پڑتال کی تو انہیں چوری کرتے ہوئے اپنے ہی اہلکار دکھائی دیے۔ ان پندرہ پولیس افسران کو مکمل شناخت کے بعد گرفتار کیا گیا۔ پولیس اور دفتر استغاثہ نے ابتدا میں اس واردات کو ڈاکووں کی کارروائی خیال کیا تھا۔ 

ویڈیو دیکھیے 00:58

ڈکیتی ناکام بنانے والا گمنام تارک وطن

DW.COM

Audios and videos on the topic