1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

صحت

اینٹی ریٹرووائرل دوائیں ایچ آئی وی کے خلاف مؤثر ہیں، اقوام متحدہ

ایچ آئی وی ایڈز کے شکار مریض فوری طور پر علاج شروع کر دیں تو اس مرض کا وائرس پھیلنے سے روکنے میں مؤثر کردار ادا کر سکتے ہیں۔ یہ بات اس مرض کے خلاف جدوجہد کرنے والی اقوام متحدہ کی ایجنسیوں نے کہی ہے۔

default

ان ایجنسیوں نے جمعرات کو بتایا کہ اس مرض میں مبتلا افراد اپنے ساتھی تک ایچ آئی وی کے وائرس کی منتقلی روک سکتے ہیں، تاہم اس مقصد کے لیے انہیں فوری علاج کا طریقہ اختیار کرنا ہو گا۔

اقوام متحدہ کے مطابق ایسے مریض اینٹی ریٹرووائرل دوائیں مناسب طریقے سے لیں، تو ایچ آئی وی کے وائرس کی دیگر افراد تک منتقلی کا خطرہ چھیانوے فیصد تک کم کیا جا سکتا ہے۔ یہ بات ایک تحقیق کے ذریعے پتہ چلی ہے، جو افریقہ، ایشیا، لاطینی امریکہ اور ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں سترہ سو سے زائد جوڑوں پر کی گئی۔ تحقیق میں شامل جوڑوں میں سے کوئی ایک اس مرض میں مبتلا تھا۔ یہ تحقیق 2005ء میں شروع ہوئی تھی۔

حکام کے مطابق یہ تحقیق اس قدر کامیاب رہی کہ اسے طے شدہ وقت سے چار سال پہلے ہی روک دیا گیا ہے۔ ایچ آئی وی ایڈز پر اقوام متحدہ کے جوائنٹ پروگرام یواین ایڈز کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر میشیل سیدیبی کا کہنا ہے کہ یہ پیش رفت بہت اہم ہے اور اس نے بہت کچھ بدل دیا ہے۔

World Health Organization - WHO, Logo

ڈبلیو ایچ او ایچ آئی وی کے شکار مریضوں کے لیے نیا ہدایت نامہ جاری کرنے والی ہے

عالمی ادارہ برائے صحت ڈبلیو ایچ او کی ڈائریکٹر جنرل مارگریٹ چان نے کہا، ’ہم جانتے ہیں کہ ایچ آئی وی کا وائرس پھیلنے کے اسّی فیصد سے زائد نئے کیسز جنسی تعلق کے نتیجے میں سامنے آ رہے ہیں۔ یوں یہ پیش رفت انتہائی اہم ہے۔‘

خبررساں ادارے ڈی پی اے کے مطابق یو این ایڈز اس مرض کے خلاف مہم میں شریک دیگر اداروں کے ساتھ مل کر ایک کانفرنس بلانے کا ارادہ بھی رکھتی ہے، جس میں اس تحقیق پر بات چیت کی جائے گی۔

دوسری جانب ڈبلیو ایچ او رواں برس جولائی میں ایچ آئی وی کے شکار مریضوں کے لیے نیا ہدایت نامہ جاری کرے گی، جس پر عمل کرتے ہوئے ہوئے وہ اپنے ساتھی کو اس وائرس سے بچا سکیں گے۔

رپورٹ: ندیم گِل/خبررساں ادارے

ادارت: امیتاز احمد

DW.COM

ویب لنکس