1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’ایران عرب دنیا کے بحرانوں کے حل میں رکاوٹ ہے‘

متحدہ عرب امارات نے ایران پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ عرب دنیا کے بحرانوں کو حل ہونے نہیں دیتا۔ اس بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ تہران حکومت دہشت گرد گروپوں کی حمایت بھی کرتی ہے۔

متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ عبداللہ بن زید النہیان نے کہا ہے کہ ایران عرب دنیا کے ملکوں عراق، شام، یمن، لبنان، سعودی عرب، بحرین اور کویت کے اندرونی معاملات میں مداخلت کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔ النہیان کے مطابق ایران ان عرب ملکوں کے اندر دہشت گردی میں ملوث گروپوں اور اُن کے مختلف سیلز کی عملی حمایت کرتا ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ ایسے دہشت گرد گروپوں میں شام میں حکومتی فوج کے ساتھ لڑائی میں شریک لبنان کی حزب اللہ اور یمن میں سرگرم حوثی ملیشیا اہم ہیں۔

ایران سعودی عرب کا شکرگزار

قطر اور ايران کے سفارتی تعلقات کی بحالی

توہین مذہب کے قوانین، دنیا میں پھیلتے ہوئے

طاقتور شیعہ رہنما کا سنی خلیجی ممالک کا دورہ کیا رنگ لاے گا؟

اماراتی وزیر خارجہ نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے وزارتی سطح کے سالانہ اجلاس میں تقریر کرتے ہوئےکہا کہ ایران عرب دنیا میں پائے جانے والے بحران کا ناجائز فائدہ بھی اٹھاتا ہے اور ملکی حاکمیت و خود مختاری کے مسلمہ اصولوں کی خلاف ورزی کا سلسلہ بھی جاری رکھے ہوئے ہے۔ اس تقریر میں اماراتی وزیر خارجہ نے یہ بھی کہا کہ ایران علاقائی سلامتی کو نظرانداز کرتے ہوئے بحرانی صورت حال کو مزید بڑھانے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔

Parade Militär Rakete Iran (picture-alliance/abaca/F.Bahrami)

ایران نے دور مار میزائل کا تجربہ تیئیس ستمبر کو کیا ہے

خلیجی ریاست متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ کے مطابق ایران کی جارحانہ اور توسیع پسندی کی پالیسیوں نے عرب دنیا کے تمام بحرانوں کو ناقابلِ حل بنا کر رکھ دیا ہے۔ خلیجی ریاست کے وزیر نے ایران پر یہ الزام بھی عائد کیا کہ وہ دوسرے ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرنے سے باز نہیں آتا۔

ویڈیو دیکھیے 02:37

قطر کا بحران: کون کس کے ساتھ ہے؟

انہوں نے ایران کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تہران حکومت تمام عرب ممالک کے ساتھ ہم آہنگی پیدا کرتے ہوئے مساویانہ تعلقات کو آگے بڑھائے۔ النہیان نے ایران سے یہ بھی کہا کہ وہ خطے کی تمام ریاستوں کی جغرافیائی خود مختاری کا بھی احترام بھی کرے۔

اس تقریر میں اماراتی وزیر خارجہ نے واضح کیا کہ اُن کا اصولی اور واضح فیصلہ ہے کہ بحرانی صورت حال کے حل کے لیے کسی بھی متبادل کو قبول نہیں کیا جائے گا۔ اُن کی ریاست دہشت گردی کے خلاف اصولوں کی بنیاد پر کھڑی ہے اور ایسے افعال میں ملوث تمام افراد کے خلاف بلا امتیاز کارروائی جاری رکھی جائے گی۔ اس موقع پر عبداللہ بن زید النہیان نے قطری بحران پر بھی اظہار خیال کیا۔

DW.COM

Audios and videos on the topic