اپنے بچے سے بدسلوکی کا الزام: بریڈ پِٹ کی بے گناہی ثابت | فن و ثقافت | DW | 10.11.2016
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

اپنے بچے سے بدسلوکی کا الزام: بریڈ پِٹ کی بے گناہی ثابت

نامور امریکی اداکار بریڈ پٹ پر ان کی سابق اہلیہ نے الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے اپنے ایک بچے کے ساتھ بدسلوکی کی تھی۔ اس مقدمے میں بریڈ پٹ کو بے قصور قرار دے دیا گیا ہے۔

نیوز ایجنسی اے ایف پی کے مطابق بریڈ پٹ پر ان کی سابق اہلیہ انجیلینا جولی نے الزام عائد کیا تھا کہ رواں برس برس ستمبر میں فرانس کی فلائٹ کے دوران بریڈ پٹ نے اپنے 15 سالہ بیٹے میڈاکس کو جان بوجھ کر  پیٹا تھا۔

اس الزام عائد کے بعد سماجی کارکنان نے بریڈ پٹ، انجیلینا جولی، ان کے بچوں اور عینی شاہدین کے انٹرویو کیے تھے۔ امریکی چینل سی این این اور یو ایس اے ٹوڈے کے مطابق ’لاس اینجلس کاؤنٹی ڈیپارٹمنٹ آف چلڈرن اینڈ فیملی سروس‘ نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ 52 سالہ بریڈ پٹ کسی طرح کی بدسلوکی میں ملوث نہیں تھے۔

41 سالہ انجیلینا جولی نے اس برس ستمبر میں بریڈ پٹ سے طلاق لینے کے لیے درخواست دے دی تھی۔ انجیلینا جولی نے اپنے تمام چھ بچوں کی مکمل پرورش کا حق یا تحویل حاصل کرنے کے لیے بھی عدالت میں درخواست دی ہوئی ہے جبکہ بریڈ پٹ نے عدالت میں بچوں کی مشترکہ پرورش اور دیکھ بھال کے لیے کیس کیا ہوا ہے۔

 سن 2004 سے انجیلینا جولی اور بریڈ پٹ ایک ساتھ تھے۔ انہوں نے دو سال قبل شادی کر لی تھی۔

DW.COM