1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’اِرما، امریکی تاریخ کا مہنگا ترین طوفان ثابت ہو سکتا ہے‘

کیٹیگری پانچ کے طاقتور طوفان اِرما کی زد میں آ کر کم از کم دس افراد ہلاک اور تیئیس سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔ یہ طوفان اتوار کے روز امریکی ریاست فلوریڈا سے ٹکرا سکتا ہے اور کافی تباہی کا سبب بن سکتا ہے۔

بحیرہ کریبیئن کی مختلف متاثرہ جزیروں کے لیے فرانس اور ہالینڈ کی جانب سے امدادی سامان روانہ کر دیا گیا ہے۔ آج جمعرات سات ستمبر کی علی الصبح امریکا سے غیر متحد شمال مشرقی کیریبیئن کے مختلف علاقوں اور پورٹو ریکو سے ٹکرانے کے بعد بھی اس طوفان کی شدت میں کمی واقع نہیں ہوئی۔

ابھی بھی اس طوفان کے ساتھ چلنے والے جھکڑوں کی رفتار تقریباً تین سو کلومیٹر فی گھنٹہ ہے۔

امریکا کے سمندری طوفانوں سے متعلق مرکز نے پیش گوئی کی ہے کہ  ارما اتوار کے روز کسی وقت امریکی ریاست فلوریڈا تک پہنچ جائے گا۔ فلوریڈا کے گورنر رِک اسکاٹ کے مطابق انہوں نے جمعے کے روز سے نیشنل گارڈز کے سات ہزار فوجیوں کو امدادی کاموں کے لیے جمعے کے روز سے متحرک کر دینا ہے۔ انہوں نے خبردار کیا ہے کہ اِرما نامی یہ طوفان اب سے 25 برس قبل آنے والے سمندری طوفان اینڈریو سے کہیں زیادہ بڑا، تیز اور طاقتور ہے۔ اینڈریو کے سبب ریاست فلوریڈا کے جنوبی حصوں میں شدید تباہی ہوئی تھی۔

ماہرین کو خدشہ ہے کہ اِرما میامی سے لے کر جیکس وِلے تک ریاست فلوریڈا کی پوری مشرقی ساحلی پٹی پر شدید تباہی کا سبب بن سکتا ہے۔ اس کے بعد یہ طوفان جورجیا اور کیلیفورنیا کے گنجان آباد علاقوں کو متاثر کر سکتا ہے۔

Puerto Rico Hurrikan Irma (Reuters/A. Baez)

اس طوفان کے ساتھ چلنے والے جھکڑوں کی رفتار تقریباً تین سو کلومیٹر فی گھنٹہ ہے

میامی یونیورسٹی میں طوفانوں سے متعلق معاملات کے ماہر برائن میک نولڈی نے خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کو بتایا، ’’یہ امریکی تاریخ کا سب سے زیادہ مہنگا طوفان ثابت ہو سکتا ہے۔ اگر گزشتہ دو ہفتوں کے دوران اس طوفان سے ہونے والی تباہی پر نظر دوڑائی جائے تو یہ بہت کچھ کہہ رہا ہے۔‘‘

DW.COM