1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ايران کو سوالات کا جواب دينا ہوگا: ايٹمی توانائی ايجنسی

ايران کے ايٹمی پروگرام پر جاری تنازعے ميں تہران کی حکومت پر دباؤ ميں اضافہ ہو رہا ہے۔ بين الاقوامی توانائی ايجنسی کے ڈائریکٹر يوکی يا امانو نے کل ايران سے کہا کہ اُسے خفيہ ايٹم بم بنانے کے الزام کا فوری جواب دينا چاہيے۔

وی آنا ميں بين الاقوامی ايٹمی توانائی ايجنسی

وی آنا ميں بين الاقوامی ايٹمی توانائی ايجنسی

بين الاقوامی ايٹمی توانائی ايجنسی کے بورڈ آف گورنرز کےاجلاس ميں روس اور چين سميت سلامتی کونسل کی پانچ ويٹو طاقتوں نے ايک قرارداد تيار کی ہے، جس ميں ان ملکوں نے ايران کے ايٹمی پروگرام پر گہری تشويش ظاہر کرتے ہوئے تہران سے اُس کی عالمی ذمہ داريوں کو پورا کرنے کا مطالبہ کيا ہے۔

ايران پر اس الزام کی شدت ميں انتہائی اضافہ ہو چکا ہے کہ وہ ايٹم بم کی تياری ميں مصروف ہے۔اس ليے بين الاقوامی ايٹمی توانائی ايجنسی IAEA کے سربراہ جاپان کے يوکی يا امانو کا کہنا ہے کہ وقت آ گيا ہے کہ تہران اپنے ايٹمی پروگرام کے بارے ميں بہت سے سوالات کا جواب دے، ’’ميں ايران سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ايٹمی ايجنسی سے پورا تعاون کرے اور درخواست کرتا ہوں کہ وہ اپنے ايٹمی پروگرام کے ممکنہ فوجی استعمال کے بارے ميں مطلوبہ وضاحتيں پيش کرے۔‘‘

آئی اے ای اے بہت اعلٰی ماہرين کا ايک وفد ممکنہ حد تک جلد ہی ايران روانہ کرے گی۔

بُشير ميں ايرانی ايٹمی پاور پلانٹ

بُشير ميں ايرانی ايٹمی پاور پلانٹ

ايک سوال يہ اٹھايا جا رہا ہے کہ بين الاقوامی ايٹمی توانائی ايجنسی نے ايران کے ايٹمی پروگرام کے بارے ميں اس قدر تفصيلی اور اُس سے اخذ کيے جانے والے نتائج کے اعتبار سے اتنی واضح رپورٹ آخر اب کيوں پيش کی ہے؟ کيا ايجنسی کے سربراہ امانو نے يہ سياسی دباؤ کی وجہ سے کيا ہے، جيسا کہ ايران کی سياسی قيادت کا کہنا ہے؟ ايرانی پارليمان کے اسپيکر نے تو پچھلے دنوں يہ تک کہا کہ أئی اے ای اے دراصل امريکہ کی کٹھ پتلی ہے۔ ليکن امانو نے کہا: ’’يہ صحيح ہے کہ ہم نے ابھی تک اتنی تفصيلی معلومات فراہم نہيں کی تھيں۔ اس کی وجہ يہ تھی کہ ہميں ايران کے ايٹمی پروگرام کے بارے ميں معلومات ہی بہت کم تھيں۔ ليکن پچھلے تين برسوں کے دوران تصويرزيادہ واضح ہوگئی ہے۔ ايران کو واقعی اب چند سوالات کا جواب دينا ہے۔‘‘

ايرانی صدر احمدی نژاد نتانس کے ايٹمی پلانٹ کا معائنہ کرتے ہوئے

ايرانی صدر احمدی نژاد نتانس کے ايٹمی پلانٹ کا معائنہ کرتے ہوئے

وی آنا ميں آئی اے ای اے کے بورڈ آف گورنرز کی ميٹنگ ميں رکن ممالک کی آراء ميں اختلاف رہا۔ بعض پابندياں سخت کر دينے کے حق ميں اوربعض اس ليے اس کے خلاف تھے کہ اس سے تنازعہ اور شديد ہو جائے گا۔ ويسے بھی پابندياں سلامتی کونسل ہی لگا سکتی ہے اور اس کا امکان نہيں کہ بورڈ آف گورنرز اس معاملے کو سلامتی کونسل تک لے جائے گا۔

رپورٹ: يورگ پاس، وی آنا / شہاب احمد صديقی

ادارت: عصمت جبيں

DW.COM