1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

اوباما کی کامیابی پر بین الاقوامی رد عمل

وفاقی جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے امریکی صدارتی انتخابات کے نتائج کو تاریخی قراردیا۔ میرکل نے کہا کہ برلن حکومت کو بین الاوقیانوسی تعلقات کی قدر و منزلت کا بخوبی اندازہ ہے۔

default

نو منتخب امریکی صدر باراک اوباما اپنی اہلیہ اور بیٹیوں کے ہمراہ

فرانسیسی صدر نیکو لا سارکوزی نے اوباما کو مبارکباد کا پیغام دیتے ہوئے اپنے بیان میں کہا کہ ایک ایسے وقت میں جبکہ امریکہ اور یورپ مشترکہ طور پر گوناگوں چیلنجز کا سامنا کر رہے ہیں اوباما کے نئے امریکی صدر منتخب ہونے سے فرانس، یورپ اور اس سے باہر بھی بہتری کی امید کی ایک نئی لہر دوڑ گئی ہے۔

Deutschland USA Angela Merkel und Frank-Walter Steinmeier zu Obama

جرمن چانسلر انگیلا میرکل اور وزیر خارجہ فرانک والٹر اشٹائن مائر

ادھر برطانوی وزیر اعظم گورڈن براؤن نے امریکہ اور برطانیہ کے تعلقات کو دونوں ملکوں کی سلامتی اور خوشحالی کے لئے غیر معمولی اہمیت کا حامل قرار دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ باراک اوباما نے ایک متاثر کن انتخابی مہم چلائی جس میں ان کے رجعت پسند خیالات اور مستقبل کے خواب جھلک رہے تھے۔

یورپی کمیشن کے صدر خوزے مانوئل باروسو کے مطابق اب اس امر کی ضرورت ہے کہ یورپی یونین اور امریکہ اس وقت جاری عالمی مالیاتی بحران اور دیگر اہم مسائل کے بارے میں نئی ڈیل کرے۔ روس نے اوباما کی کامیابی کے بعد امریکہ ۔روس تعلقات میں تازگی کی فضاء کی امید ظاہر کی ہے۔

Indien Premierminister Manmohan Singh

بھارتی وزیر اعظم نے اوباما کے امریکی صدر منتخب ہونے پر انہیں مبارکباد دی

چوٹی کے یورپی لیڈروں کی جانب سے بھی نہایت دلچسپ بیانات سامنے آئے ہیں۔ فرانس میں گزشتہ صدارتی انتخابات میں فرانیسی صدر نیکولا سارکوزی کے سوشلسٹ مد مقابل Segolene Royal کے ایک ٹیلی فون انٹرویو میں دیے گئے بیان کے مطابق باراک اوباما حال اور مستقبل کے امریکہ کی مجسم تصویر ہیں۔ امریکہ سمیت دنیاء کے مختلف ممالک کے دانشور، ساستدان اور صحافی حلقوں کی توجہ یکایک امریکہ کی مسقبل کی ممکنہ پالیسی کی طرف مرکوز ہو گئی ہے۔ برطانوی اخبار دی گارڈین کے ایک معروف امریکی ایڈیٹر Michael Tomasky کے مطابق اوباما کو ریپبلکن امیدوار مک کن کو بش کی عراق پالیسی کی حمایت کرنے کے سبب ایک دفاعی پوزیشن اختیار کرنے اور امریکہ کے امیر طبقے پر جارج بش کی جانب سے لگائے گئے ٹیکسوں کو برقرار رکھنا چاہئیے۔

موجودہ امریکی صدر جارج بش نے اوباما کے لئے ایک خوشگوار اور کامیاب مستقبل کی نیک خواھشات کا اظہار کیا۔ ایشاء اور امریکہ کے تمام ٹیلی وژن اور ریڈیو چینلز کی بدھ کے روز کی صبح کی نشریات صرف اور صرف باراک اوباما کی کامیابی کی خبر اور اس پر سامنے والے عالمی رد عمل پر مشتمل تھے۔ چین کی جانب سے اب تک کوئی سرکاری بیان نہیں آیا ہے تاہم چینی میڈیاء اور تمام مقبول ویب سائٹس پر باراک اوباما کی فتح کو بھرپور کوریج دیا گیا۔

Georgien EU Frankreich Nicolas Sarkozy in Tiflis

فرانسیسی صدر سارکوزی

پاکستان کے صدر آصف علی زرداری نے باراک اوباما کو امریکی صدر منتخب ہونے پر مبارکباد پیش کی ہے۔ ذرائع کے مطابق صدر پاکستان نے امریکہ کی تاریخ میں پہلی بار وائٹ ہاؤس میں امریکی صدر کی حیثیت سے پہنچنے والے سیاہ فام لیڈر باراک اوباما کے ساتھ ساتھ نائب صدر جو بائیڈن کو بھی مبارکباد پیش کی ہے۔

بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ نے اوباما کی غیر معمولی کامیابی پر انہیں مبارکباد دی اور کہا کہ اوباما کے صدر منتخب ہونے سے بھارت اور امریکہ کے تعلقات مزید مستحکم ہوں گے۔ انہوں نے نومنتخب امریکی صدر کو دورہ بھارت کی دعوت بھی دی۔

Japan feiert Wahlsieg Barack Obama US Präsidentschaftswahl

اوباما کی فتح پر دنیا بھر میں ڈیموکریٹس کے حمایتی خوشی کا اظہار کر رہے ہیں

پنڈتوں سے لے کر سیاست دانوں، ارباب اقتدار سے لے کر عوام تک امریکی ڈیموکریٹ صدارتی امیدوار باراک اوباما کی صدارتی انتخاب میں واضح کامیابی پرانہیں مبارکباد پیش کر رہے ہیں۔

ماہرین و مبصرین ریپبلکن لیڈر مکین کی ناکامی کو امریکہ میں نسل پرستی کی شکست قرار دے رہے ہیں۔ اکثریت کی رائے میں اوباما کی جیت دراصل جارج بش کی من مانی اور ہٹ دھرمی پر مبنی دور کا خاتمہ ہے۔

شکست خوردہ ریپبلکن امیدوار مکین نے اوباما کو مبارکباد پیش کی جبکہ امریکی صدر کے دفتر کے ذرائع کے مطابق جارج ڈبلیو بش نے اوباما کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ اوباما کے ایک طویل سفر کا آغاز ہو رہا ہے۔

Audios and videos on the topic