1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

اوباما کی صدارتی امیدوار کے طور پر باضابطہ نامزدگی

امریکی ریاست کولوراڈو کے شہرڈینور میں جاری ڈیموکریٹک پارٹی کے چار روزہ نیشنل کنویشن کے تیسرے دن بدھ کی رات ہزاروں مندوبین نے سیاہ فام سینیٹر بیراک اوباما کوباقاعدہ طور پر پارٹی کا صدارتی امیدوار نامزد کردیا۔

default

کیا اوباما امریکہ کے پہلے سیاہ فام صدر بن جائیں گے؟

امریکی تاریخ میں ریاست Illinois میں شکاگوسے تعلق رکھنے والے 47 سالہ اوباما وہ پہلے سیاہ فام سیاستدان ہیں جنہیں امریکہ میں دونوں بڑی جماعتوں ڈیمو کریٹک پارٹی اور ری پبلکن پارٹی میں سے کسی ایک نے اپنا صدارتی امیدوار نامزد کیا ہے۔

Parteitag der US-Demokraten in Denver, Michelle Obama mit ihrern Töchtern Sasha und Malia

ڈینور کنویشن میں شریک بیراک اوباما کی اہلیہ میشیل اپنی دونوں بیٹیوں کے ہمراہ

بیراک اوباما کو پارٹی کا صدارتی امیدوار نامزد کرنے کے لئے ڈینور میں کئی روزہ قومی اجتماع کے دوران مقامی وقت کے مطابق بدھ کی رات، جب یورپ اور ایشیا میں جمعرات کی صبح ہو چکی تھی، کنویشن کے مندوبین کی طرف سے رائے دہی ابھی جاری تھی کہ سابقہ خاتون اول اور امریکی سینیٹ کی رکن ہیلری کلنٹن نےریاست نیویارک کے مندوبین کی طرف سے رائے دہی کے دوران یہ تجویز پیش کردی کہ اوباما کو متفقہ رائے سے نامزد کیاجانا چاہیئے۔

اس تجویز کے بعد کنویشن کے مندوبین نے بیراک اوباما کو اں کے حق میں آواز بلند کرکے متفقہ رائے سے صدارتی امیدوار نامزد کردیا۔ نومبر میں ہونے والے الیکشن میں اوباما کے حریف امیدوار ری پبلکن پارٹی کے سینیٹر جان میک کین ہوں گے۔

US Vizepräsident Kandidat Joe Biden

نائب صدر کے عہدے کے لئے ڈیموکریٹک امیدوارجو بائیڈن

امریکہ میں نیشنل ڈیموکریٹک کنویشن کے تیسرے روز جن بہت اہم مقررین نے ہزاروں مندوبین سے خطاب کیا ان میں سابق صدر بل کلنٹں بھی شامل تھےاور ماضی میں صدارتی انتخابی دوڑ میں شامل رہ چکنے والے سینیٹر جان کیری کے علاوہ سینیٹر جو بائیڈن بھی جنہیں بدھ کی رات پارٹی کنویشن میں باضابطہ طور پر بیراک اوباما کا نائب صدارتی امیدوار بھی نامزد کردیا گیا۔

ڈینور میں جاری کنویشن میں بیراک اوباما کی صدارتی امیدوارکے طور پر کامیاب نامزدگی کا باقاعدہ اعلان امریکی ایوان نمائندگان کی خاتون اسپیکر نینسی پیلوسی نے کیا۔

بیراک اوباما جو اس کنویشن کے اختتام پر مندوبین سے جمعرات کے روز خطاب کریں گے، اپنی نامزدگی کو قبول کرلیں گے۔ ان کے ایک قریبی مشیر کے بقول اس موقع پر اپنی تقریر میں اوباما امریکہ میں ایسی وسیع تر سیاسی تبدیلیوں کی وکالت بھی کریں گے جن کی توقع امریکی عوام ان سے کرتے ہیں۔