1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

اوباما۔پاول: ’’ہم ساتھ ساتھ ہیں‘‘

سابق امریکی وزیر خارجہ کولین پاول نے صدارتی عہدے کے ڈیموکریٹ امیدوار باراک اوباما کی حمایت کی ہے۔

default

رائے عامہ کے جائزوں کے مطابق باراک اوباما کو اپنے حریف جان میکین پر واضح سبقت حاصل ہے

’’این بی سی‘‘ کے ’’میٹ دی پریس‘‘ پروگرام میں کولین پاول نے صدارتی عہدے کے لئے اوباما کو رپبلکن جان میککین پر ترجیح دی۔ موجودہ صدر جارج بُش کے سابق وزیر خارجہ نے کہا کہ اگر حتمی صدارتی انتخابات میں اوباما کی فتح ہوتی ہے، تو یہ بات صرف افریقی نژاد امریکیوں کے لئے ہی نہیں بلکہ تمام امریکیوں کے لئے باعث فخر ہوگی۔

پاول نے کہا کہ اگر اوباما صدر بن جاتے ہیں تو اس سے نہ صرف امریکہ میں، بلکہ پوری دنیا میں ہلچل اور سنسنی پیدا ہوگی کیوں کہ ڈیموکریٹ سینیٹر بہت ساری صلاحیتوں کے مالک ہیں۔

Kalenderblatt US-Präsident George W. Bush ernennt Colin Powell Außenminister

سن دو ہزار کی ایک پرانی تصویر میں موجودہ امریکی صدر جارج بُش اور سابق وزیر خارجہ کولین پاول

چار نومبر کو امریکہ میں حتمی صدارتی انتخابات ہورہے ہیں اور اس سے محض دو ہفتے قبل کولین پاول کی طرف سے حمایت اوباما کے لئے بہت معنی رکھتی ہے۔ عوامی جائزوں میں اوباما کو اپنے حریف رپبلکن سینیٹر جان میکین پر سبقت حاصل ہے۔

واشنگٹن میں ہمارے ساتھی انور اقبال کہتے ہیں کہ کولین پاول کا بیان سیاہ فام ڈیموکریٹ سینیٹر کے لئے معنی خیز ہے اور اس سے امریکہ میں باراک اوباما کو مزید مقبولیت اور حمایت حاصل ہوگی۔

USA Wahlen Barack Obama in Portland Dossierbild Links

باراک اوباما ایک انتخابی مہم کے دوران اپنے ہزاروں حامیوں سے مخاطب ہوتے ہوئے

ایک سوال کے جواب میں انور اقبال نے تاہم کہا کہ پاکستان کے تئیں باراک اوباما کے جارحانہ اور سخت ترین لہجے کے باعث امریکہ میں بعض مسلمان ان سے ناراض ہیں۔ لیکن انور اقبال کے مطابق بیانات اپنی جگہ، صدر بننے کی صورت میں اوباما کی پاکستان پالیسی کچھ زیادہ مختلف نہیں ہوگی بلکہ عین ممکن ہے کہ موجودہ پالیسی سے بہتر ہی ہوگی۔

DW.COM

Audios and videos on the topic