1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

انگلینڈ کے ’مائیکل بیون‘ نے آسٹریلیا کو مات دی

اگرچہ فیفا ورلڈ کپ میں انگینڈ کا آغاز اچھا نہیں رہا ہے تاہم انگلش کرکٹ ٹیم نے آسٹریلیا کے خلاف پانچ میچوں کی ون ڈے سیریز کے پہلے میچ میں چار وکٹوں سے شاندار کامیابی حاصل کی۔

default

اوئن مورگن نے دلکش سنچری سکور کی

آسٹریلیا اورانگلینڈ کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان منگل کے روز ’نیٹ ویسٹ‘ سیریز کے پہلے میچ میں آسٹریلیا نے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ پچاس اووروں میں سات وکٹوں کے نقصان پر 267 رنز بنائے۔ انگلینڈ نے مڈل آرڈر بیٹسمین اوئن مورگن کی دلکش سنچری کی بدولت کامیابی سے اپنے ہدف کا تعاقب کیا۔

بیسویں اوور میں انگلینڈ نے ستانوے کے مجموعی سکور پر اپنے چار اہم کھلاڑی گنوا دئے تھے لیکن پھر ہونہار نوجوان بلے باز اوئن مورگن نے آل راوٴنڈر لیوک رائٹ کے ساتھ شاندار شراکت میں ٹیم کا سکور 192 تک پہنچا دیا۔ لیوک رائٹ نے چھتیس رنز بنائے۔

Andrew Strauss

میچ کے بعد انگلش ٹیم کے کپتان سٹراؤس نے مورگن کا موازنہ ’مائیکل بیون‘ کے ساتھ کیا

اس کے بعد مورگن نے ٹم بریسنن کے ساتھ مل کر ٹیم کی کشتی کو کنارے لگا دیا۔ مورگن نے سولہ چوکوں کی مدد سے محض پچاسی گیندوں پر 103رنز بنائے اور آخر تک ناٹ آوٴٹ رہے۔ اپنی بہترین کارکردگی کے نتیجے میں مورگن مین آف دی میچ قرار پائے۔

انگلش کپتان اینڈریو سٹراوٴس نے میچ کے بعد لیفٹ ہینڈر بیٹسمین اوئن مورگن کا موازنہ سابق آسٹریلوی مایہ ناز کھلاڑی مائیکل بیون کے ساتھ کیا۔ بائیں ہاتھ سے کھیلنے والے مائیکل بیون میچ کے مشکل مراحل میں اکثر اپنی ٹیم کو جیت دلانے کے لئے مشہور تھے۔ بیون نے 232 ایک روزہ بین الاقوامی میچوں میں آسٹریلیا کی نمائندگی کی۔ اپنے ون ڈے کیریئر میں بیون نے 53 سے بھی زائد کی اوسط سے تقریباً سات ہزار رنز بنائے، جن میں چھ سنچریاں شامل تھیں۔

انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے کپتان اینڈریو سٹراوٴس نے مورگن کی تعریف میں کہا:’’مارگی کے بارے میں سب سے اہم بات یہ ہے کہ وہ ایک اچھا جارحانہ ’فینشر‘ ہے۔ اس کے کھیلنے کے انداز سے مخالف ٹیم کا کپتان دباوٴ کا شکار ہو جاتا ہے۔‘‘

Cricket England Australien

انگلش ٹیم نے اس میچ میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا

اپوزیشن ٹیم آسٹریلیا کے کپتان رکی پونٹنگ نے بھی مورگن کی اننگز کی زبردست ستائش کی۔’’مورگن نے بہت ہی زبردست کھیلا۔ پچاسی بالز پر سنچری بنانا اور وہ بھی جب آپ ہدف کا تعاقب کر رہے ہوں، یہ واقعی ایک سپیشل اننگز ہے۔‘‘

آسٹریلوی ٹیم یہ ون ڈے سیریز اپنے زخمی فاسٹ بولرز بریٹ لی، مچل جانسن، بین ہلفین ہاوٴس اور پیٹر سڈل کے بغیر ہی کھیل رہی ہے۔

آسٹریلیا کی جانب سے نائب کپتان مائیکل کلارک نے سب سے زیادہ ستاسی رنز بنائے جبکہ آل راوٴنڈر جیمز ہوپس نے چونتیس رنز کی اننگز کھیلی۔ انگلش ٹیم کی طرف سے لیوک رائٹ، جیمز اینڈرسن اور براڈ نے دو دو وکٹیں حاصل کیں۔ آسٹریلوی فاسٹ بولر رائن ہیرس نے بیالیس رنز کے عوض تین انگلش کھلاڑیوں کو آوٴٹ کیا۔

روایتی حریفوں کے درمیان ’نیٹ ویسٹ‘ ون ڈے سیریز کا دوسرا میچ چوبیس جون کو کارڈف میں کھیلا جارہا ہے۔

رپورٹ: گوہر نذیر گیلانی

ادارت: عاطف بلوچ

DW.COM