1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

انڈونیشیا میں آتش فشاں پھر پھٹ پڑا، 65 افراد ہلاک

انڈونیشیا میں میراپی نامی آتش فشاں پہاڑ دوبارہ پھٹ پڑا ہے، جس کے نتیجے میں 65 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ جمعہ کو اس آتش فشاں کے ایک مرتبہ پھر پھٹنے سے سینکڑوں افراد متاثر ہوئے ہیں۔

default

ماؤنٹ میراپی

ماؤنٹ میراپی انڈونیشیا کے جزیرے جاوا پر واقع ہے، جو اس سے پہلے 26 اکتوبر کو پھٹا تھا اور اب ہلاکتوں کی مجموعی تعداد ایک سو سے تجاوز کر گئی ہے۔ یوگیاکارتا کے ایک ہسپتال میں ڈاکٹر سُسینو وِبوو نے جمعہ کو ہونے والی ہلاکتوں کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ہلاک ہونے والوں میں سات بچے بھی شامل ہیں۔

یوگیاکارتا کے ہسپتال میں ہی جمعہ کو 58 لاشیں لائی گئیں۔ ایمرجنسی ذرائع کا کہنا ہے کہ امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔ ہنگامی امدادی اداروں نے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ بھی ظاہر کیا ہے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز نے حکام کے حوالے سے گزشتہ ہفتے سے اب تک ہونے والی ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 109بتائی ہے۔ انڈونیشی حکام کے مطابق متاثرہ علاقوں سے اب تک ڈیڑھ لاکھ افراد نقل مکانی کر چکے ہیں۔

اس علاقے پر دھوئیں کے بادل چھائے ہوئے ہیں، جس سے دن بھی رات میں بدل گیا ہے۔ وہاں موجود روئٹرز کے ایک فوٹوگرافر نے بتایا، ’دن کے وقت اندھیرا چھایا ہوا ہے اور گاڑیوں کی ہیڈلائٹس آن ہیں۔ کچھ دکھائی نہیں دے رہا۔ ایسا لگتا ہے، جیسے ریت برس رہی ہو۔‘

یوگیاکارتا کا ہوائی اڈہ بھی بند کر دیا گیا ہے، جبکہ پروازیں قریبی شہر سولو بھیجی جا رہی ہیں۔ ایک حکومتی ماہر برکانیات سورونو کا کہنا ہے کہ آتش فشاں سے اٹھنے والی راکھ چار کلومیٹر کے علاقے میں پھیلی ہوئی ہے جبکہ 20 کلومیٹر رداس تک کے دیہات کو خالی کرا لیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا، ’یہ آتش فشاں ماضی کے مقابلے میں زیادہ خطرناک بن چکا ہے، اس کے بارے میں کوئی پیشین گوئی ممکن نہیں رہی۔‘

Flash-Galerie Merapi Vulkan Ausbruch Indonesien

متعدد مویشی بھی مارے گئے ہیں

اُدھر انڈونیشیا کے صدر سسیلو بامبانگ یودھویونو نے کہا ہے کہ اس قدرتی آفت کے باعث ہلاک ہونے والے مویشیوں کے مالکان کو مالی ازالے کی ادائیگیاں کی جائیں گی۔ ان کے اس اعلان کا مقصد متاثرہ علاقے چھوڑنے کے سلسلے میں شہریوں کی حوصلہ افزائی کرنا ہے۔ صدر نے کہا، ’میراپی کے ٹھنڈا پڑنے کا کوئی امکان دکھائی نہیں دیتا۔‘

دوسری جانب انڈونیشیا کو سماٹرا کے جنوب میں مینتاوائی جزائر پر گزشتہ ہفتے آنے والے سونامی کے نتائج کا سامنابھی ہے، جس کے نتیجے میں کم از کم 431 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

خیال رہے کہ انڈونیشیا بحرالکاہل کے ’رِنگ آف فائر‘ یعنی آتشیں حصار کہلانے والے علاقے میں آتا ہے، جہاں زمینی پرتیں آتش فشاں پہاڑوں کے پھٹنے اور زلزلوں کا باعث بنتی ہیں۔ ماؤنٹ میراپی کو وہاں کا سب سے طاقتور آتش فشاں قرار دیا جاتا ہے۔

رپورٹ: ندیم گِل

ادارت: مقبول ملک

DW.COM

ویب لنکس