1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

انتخابات ملتوی نہیں ہوں گے، سوڈانی الیکشن کمیشن

سوڈان کے قومی الیکشن کمیشن نے انتخابات التواء کو مسترد کر دیا ہے۔ ملک کی اہم اپوزیشن جماعت اُمہ نے ان انتخابات کو چار ہفتوں تک ملتوی کرنے کا مطالبہ کیا تھا اور بائیکاٹ کی دھمکی دی تھی۔

default

عمر البشیر صدارتی انتخابات کے لئے نام درج کرواتے ہوئے

اپوزیشن جماعت اور 1986ء میں ہونے والے آخری انتخابات میں فتح حاصل کرنے والی امہ پارٹی نے اپنے مطالبات میں کہا تھا کہ انتخابات کو چار ہفتوں کے لئے ملتوی کیا جائے اور الیکشن کمیشن کے لئے نئی باڈی ترتیب جائے تاکہ انتخابات صاف اور شفاف طریقے سے منعقد ہوں۔ سوڈان کے لئے امریکی مندوب کے مطابق امریکہ کو امید ہے کہ یہ انتخابات اپنے وقت پر منعقد ہوں گے اور ہر طرح سے صاف اور شفاف ہوں گے۔

اپوزیشن کی کئی جماعتیں انتخابات کے بائیکاٹ کا اعلان کر چکی ہیں جبکہ کئی جماعتوں نے بائیکاٹ کی دھمکی دے رکھی ہے۔

ہفتے کے روز اپنے ایک بیان میں الیکشن کمیشن کے ترجمان عبداللہ احمد عبداللہ نے کہا کہ انتخابات اپنے اعلان کردہ وقت اورتاریخ کے مطابق گیارہ تا تیرہ اپریل کو منعقد ہوں گے۔

Friedensverhandlungen in Sudan

سوڈان پیپلز لیبریشن موومنٹ نے انتخابات سے دستبردار ہونے کا اعلان کیا ہے

سوڈان کے لئے امریکی مندوب سکاٹ گراشن نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کے نمائندوں سے ان کی ملاقاتوں میں انہیں یقین دلایا گیا ہے کہ انتخابات تمام ممکنہ حد تک شفاف ہوں گے۔

اس سے قبل سب سے بڑی اپوزیشن جماعت امُہ پارٹی نے الیکشن کمیشن پر صدر عمرالبشیر کی جماعت نیشنل کانگریس پارٹی کی حمایت کا الزام عائد کیا تھا۔ اُمہ پارٹی نے سلامتی اقدامات کی آڑ میں آزاد میڈیا کی انتخابی عمل کی جانچ پڑتال پر پابندیوں پر بھی کڑی تنقید کی تھی۔ اُمہ پارٹی نے کہا ہے کہ وہ انتخابات میں شریک ہونے یا نہ ہونے کے حوالے سے حتمی فیصلہ منگل کے روز کرے گی۔ تاہم مبصرین کا خیال ہے کہ انتخابات کے التواء کا اعلان نہ کیا گیا تو اس جماعت کی انتخابات میں شمولیت خاصی مشکل دکھائی دیتی ہے۔

صدر عمر البشیر کے حکومتی اتحاد کا حصہ جنوبی سوڈان کی جماعت سوڈان پیپلز لیبریشن موومنٹ نے بھی انتخابات سے دستبرداری کا اعلان کیا ہے۔ صدر البشیر نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اگر SPLM نے اپنا فیصلہ واپس نہ لیا تو وہ جنوری میں جنوبی سوڈان کی آزادی کے لئے اعلان کردہ ریفرینڈم کے فیصلے کو منسوخ کردیں گے۔

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : کشورمصطفیٰ

DW.COM