1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

امریکی سینٹ میں کارصنعت کے لئے خصوصی امداد پر جاری بحث

امریکہ میں مالیاتی بحران کے باعث ہر ادارہ حکومت کی جانب دیکھ رہا ہے۔ بینکوں اور مالیاتی اداروں کی مدد کو دیکھتے ہوئے اب امریکی کار انڈسٹری بھی حکومتی امداد اور تعاون کی طلب گار ہے۔

default

امریکی کار ساز کمپنیاں ان دنوں شدید مالی مشکلات کا شکار ہیں

امریکی سینیٹ میں پیر کے روز اس بارے میں بحث جاری رہے گی کہ آیا مالیاتی بحران کی شکار کارسازی کی ملکی صنعت کو سہارا دینے کے لیے تقریبا 15 بلین ڈالر کی فوری مدد مہیا جائے یا نہیں ۔ اسی حوالے سے وائٹ ہاؤس اور کانگریس کے ڈیموکریٹک ارکان آٹوموبائل انڈسٹری کی مدد اور ملکی اقتصادی بحران سے نکلنے کے لیے مسودہ قانون تیار کرنے کی کوششیں بھی کر رہے ہیں۔

تباہی کے دھانے پر کھڑی اس امریکی صعنت کے لیے ان رقوم کی فراہمی ابھی تک غیریقینی ہے کیونکہ نومنتخب صدر باراک اوباما کی ڈیموکریٹک پارٹی اس صنعت کے مالیاتی بیل آؤٹ کے حق میں ہے جبکہ بیشتر ری پبلیکن ارکان اس اقدام کی حمایت سے ہچکچا رہے ہیں۔

USA Finanzkrise Rettungspaket abgelehnt

امریکی سینٹ کی بیکنگ کمیٹی کے سربراہ سینیٹر ڈوڈ (بائیں) نے جنرل موٹر کے سربراہ کو مستعفی ہونے کا مشورہ دیا ہے۔

بش انتظامیہ نے اکتوبر میں امریکی بازار حصص کے لیے 700 بلین ڈالر کے بیل آؤٹ کی منظوری دی تھی جسے عوام کی پذیرائی حاصل نہ ہوسکی۔ یہ بات نومبر میں ہونے والے صدارتی انتخابات کے نتائج سے بھی ثابت ہوگئی۔

باراک اوباما نے اتوار کے روز شکاگو میں ایک تقریب سے خطاب میں کہا کہ ملک میں بے روزگاری کی شرح میں اضافہ ہو رہا ہے اور ایسے میں کارسازی کی صنعت کو سہارا نہ دینا ناقابل قبول ہوگا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ناقدین کی یہ رائے درست ہے کہ آٹوانڈسٹری کی مدد مشروط طریقے سے کی جائے۔ باراک اوباما نے کہا:

"آٹو انڈسٹری کو اپنا طریقہ کار بدلنا ہوگا، ان سب حلقوں کو بھی ایسا ہی کرنا ہوگا جن کے مفادات اس صنعت سے وابستہ ہیں۔ افرادی قوت، منیجمنٹ، شیئرہولڈرز اور قرضہ دینے والے، سب یہ بات تسلیم کررہے ہیں کہ اس انڈسٹری کے پاس کاروبار کرنے کا کوئی پائیدار طریقہ نہیں اور اگر وہ یہ توقع کرتے ہیں کہ ٹیکس دہندگان کے پیسے سے ان کی مدد کی جائے تو انہیں ان تبدیلیوں سے بڑھ کر بھی کچھ کرنا ہوگا جو یوں بھی بیس تیس برس قبل متعارف کرائی جانا چاہئے تھیں۔

USA Wahlen Demokraten Barack Obama zu seinem Pastor

نو منتخب امریکی صدر باراک اوبامہ

اقتصادی ماہرین کے مطابق امریکہ میں موٹر گاڑیاں بنانے والی تین بڑی کمپنیوں کو مختصر دورانیے کا قرضہ دینے کے لیے کوئی معاہدہ طے پا بھی جائے تو اس کا قانون بننا ابھی تک یقینی نہیںِ ہے۔ ان کمپنیوں میں جنرل موٹرز، کرائیسلر اور فورڈ موٹرز شامل ہیں جنہوں نے مالی بحران سے نکلنے کے لیے امریکی کانگریس کو 34 بلین ڈالر کی ہنگامی مدد کی درخواست کی تھی۔ تاہم تجزیہ نگاروں کے مطابق اس صنعت کو اپنی بقا کے لیے تقریبا 125بلین ڈالر کی ضرورت ہے۔

اس سلسلے میں ہونے والے معاہدے کے لیے سینیٹ کی منظوری کے بعد ایوان نمائندگان کی منظوری بھی لینا ہوگی جس کے بعد قانون کے طور پر اسے حتمی توثیق کے لیے صدر بش کو بھیجا جائے گا۔