1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل میں لیبیا کی رکنیت معطل

عالمی سلامتی کونسل نے متفقہ رائے سے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل میں لیبیا کی رکنیت معطل کر دی ہے۔ یہ فیصلہ لیبیا میں معمر قذافی کی حامی فورسز کی حکومت مخالف مظاہرین کی خلاف خونریز کارروائیوں کی وجہ سے کیا گیا۔

default

نیو یارک سے موصولہ رپورٹوں کے مطابق عالمی ادارے کی سلامتی کونسل کو جنیوا میں قائم انسانی حقوق کی کونسل نے، جو اقوام متحدہ کا انسانی حقوق سے متعلق اعلیٰ ترین ادارہ ہے، یہ سفارش کی تھی کہ 192 رکنی سکیورٹی کونسل کو جنیوا کی کونسل میں لیبیا کی رکنیت معطل کر دینا چاہیے۔

اس پر عالمی سلامتی کونسل نے منگل کی رات متفقہ رائے سے نہ صرف لیبیا کی رکنیت معطل کر دی بلکہ ساتھ ہی بالواسطہ طور پر انسانی حقوق کی کونسل کے گزشتہ جمعہ کے روز اختیار کیے جانے والے اس موقف کو بھی درست تسلیم کر لیا کہ لیبیا میں معمر قذافی اور ان کے قریبی رفقاء ملک میں انسانی حقوق کی شدید اور منظم خلاف ورزیوں کے مرتکب ہو رہے ہیں۔

NO FLASH Libyen Situation im Osten

لیبیا کے ایک مشرقی شہر کا منظر

نیو یارک میں سلامتی کونسل کے لیبیا سے متعلق اتفاق رائے سے کیے جانے والے فیصلے کے بعد عالمی ادارے کے سیکریٹری جنرل بان کی مون نے انسانی حقوق کی کونسل میں لیبیا کی رکنیت کی معطلی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک خوش آئند فیصلہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کی کونسل کا یہ فیصلہ بھی درست ہے کہ لیبیا میں انسانی حقوق کی شدید خلاف ورزیوں کی چھان بین کرائی جانی چاہیے اور ساتھ ہی سلامتی کونسل کا یہ اقدام بھی مثبت ہے کہ لیبیا کا معاملہ بین الاقوامی فوجداری عدالت میں بھیجا جانا چاہیے۔

بان کی مون نے کہا: ’’یہ تمام اقدامات ایک ایسا واضح اور اہم پیغام ہے، جس کے شمالی افریقہ، مشرق وسطیٰ اور پوری دنیا کے لیے اہم نتائج نکلیں گے۔ پیغام یہ ہے کہ انسانیت کے خلاف جرائم کے مرتکب افراد کو سزا ملے گی، کسی کے لیے کوئی معافی نہیں ہو گی اور انصاف اور احتساب کے بنیادی اصولوں کو ہی بالآخر فتح نصیب ہو گی۔‘‘

Schweiz Wirtschaft Weltwirtschaftsforum in Davos UN Ban Ki mmoon Flash-Galerie

بان کی مون

اس موقع پر اقوام متحدہ میں امریکہ کی خاتون سفیر سوزن رائس نے بھی بان کی مون ہی کی طرح کے خیالات کا اظہار کیا اور کہا کہ انسانی حقوق کی کونسل میں لیبیا کی رکنیت کی معطلی ان ریاستوں کے لیے ایک کھلا پیغام ہے، جو اپنی بندوقوں کا رخ اپنے ہی عوام کی طرف کیے ہوئے ہیں۔

سوزن رائس کے بقول ایسے رہنما اور ایسی ریاستیں، جو ایسے جرائم کی مرتکب ہوتی ہیں، ان کے لیے اقوم متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل میں کوئی جگہ نہیں ہے۔

رپورٹ: مقبول ملک

ادارت: شادی خان سیف

DW.COM

ویب لنکس