1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

اقوام متحدہ کا کمیشن بے نظیر قتل کی تحقیقات کے لئے پاکستان پہنچ گیا

اقوام متحدہ کے تین معائنہ کاروں نے جمعرات کے روز اسلام آباد آمد کے بعد بےنظیر بھٹو قتل کیس کے حوالے سے سویلین سیکیورٹی حکام کے ساتھ ملاقاتوں کا سلسلہ شروع کر دیا۔

default

اس سے قبل اس کیس میں برطانوی تفتشی ٹیم بھی تحقیقات میں پاکستانی اداروں کے ساتھ کام کرچکی ہے

اقوام متحدہ کے ایک اعلانیے کے مطابق تحقیقاتی کمیشن کو پاکستان ہی میں مقیم ایک تجربہ کار تکنیکی ٹیم کی مدد حاصل ہو گی تاہم اعلانیے میں واضح کیا گیا ہے کہ کمیشن بے نظیر بھٹو کے قتل کے معروضی حالات اور حقائق سے متعلق تفتیش کرے گا اور دہشت گردی کے اس بڑے واقعے کے مجرمانہ پہلوؤں کی تحقیقات اس کے دائرہ کار میں شامل نہیں کیونکہ پاکستانی ادارے اس حوالے سے اپنی کارروائی میں مصروف ہیں۔

خیال رہے کہ راولپنڈی پولیس کے سربراہ راؤ محمد اقبال خان نے ایک حالیہ انٹرویو میں بتایا ہے کہ 27 دسمبر 2007ء کو ہونے والے واقعے کے پانچ خطرناک ملزمان کے خلاف چالان انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش کیا جا چکا ہے اور ملزمان کے خلاف کیس کی سماعت راولپنڈی کی سینٹرل جیل اڈیالہ میں ہو رہی ہے۔

Zaradari spricht vor UN-Vollversammlung

اقوام متحدہ کا کمیشن پاکستانی حکومت کی درخواست پر تحقیقات کر رہا ہے

سٹی پولیس افسر کا کہنا ہے کہ 27 دسمبر کو دہشت گردی کی اس خوفناک واردات کے فورا بعد ہی جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرنے کے بعد جگہ کو دھویا گیا تھا تاہم اس عمل سے کوئی شہادت ضائع نہیں ہوئی اور اس کیس کے شواہد سے متعلق شکوک و شبہات بے جا ہیں۔

اقوام متحدہ کا کمیشن تقریباً 6 ماہ میں اپنی رپورٹ سیکریٹری جنرل بان کی مون کو پیش کرے گا جس کے بعد اسے سلامتی کونسل میں بھی پیش کیا جائے گا۔ حکومت پاکستان کی درخواست پر ہونے والی تحقیقات پر کئی ملین ڈالر کے متنازعہ اخراجات کے علاوہ یہ اعتراض بھی اٹھ رہا ہے کہ اس کی رپورٹ محض تحقیقاتی اور سفارشی نوعیت کی ہو گی اور اس کی بنیاد پر بین الاقوامی ادارہ از خود کوئی قدم نہیں اٹھا سکے گا۔

علاوہ ازیں ناقدین کمیشن کے دائرہ کار کا تعین نہ ہونے پر بھی معترض ہیں۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ سیاسی قتل کی ایسی ہی کئی دوسری وارداتوں کی طرح بے نظیر بھٹو قتل کیس بھی غالبا یونہی پراسراریت میں لپٹا رہے گا کیونکہ ماضی میں ایسے کئی تحقیقاتی کمیشن اصل مجرموں تک پہنچنے میں ناکام رہے۔

رپورٹ : امتیاز گل، اسلام آباد

ادارت : عاطف توقیر