1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

افغان کرکٹ ٹیم کا دورہ پاکستان، ایبٹ آباد کا میچ منتقل

پاکستانی کرکٹ بورڈ نے کہا ہے کہ افغانستان کی کرکٹ ٹیم دورہ پاکستان کے دوران ایبٹ آباد میں ایک روزہ میچ نہیں کھیلے گی۔ اس سے قبل تین ایک روزہ میچوں کی سیریز کا ایک میچ ایبٹ آباد میں شیڈول کیا گیا تھا۔

default

رواں ماہ کے آغاز پر ہی دہشت گرد القاعدہ نیٹ ورک کا سربراہ اسامہ بن لادن، امریکی کمانڈوز کے ایک خفیہ آپریشن میں ایبٹ آباد میں ہلاک کر دیا گیا تھا۔ اگرچہ پاکستانی کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے کہا تھا کہ افغان کرکٹ ٹیم اپنے دورہ پاکستان کے دوران ایبٹ آباد میں بھی ایک میچ کھیلے گی تاہم جمعرات کے روز بورڈ کی طرف سے جاری کیے گئے ایک نئے بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ اب ایبٹ آباد میں کوئی بھی میچ نہیں کھیلا جائے گا۔

پی سی بی کے چیئر مین اعجاز بٹ اور وزیر داخلہ رحمان ملک کے مابین

Afghanistan vs Pakistan Cricket Asian Games

ایشیائی گیمز میں پاک افغان ٹیموں کے درمیان کھیلے جانے والے میچ کا ایک منظر

ہونے والی ایک ملاقات کے بعد یہ بیان سامنے آیا ہے۔ پاکستان کی اے ٹیم اور افغان قومی کرکٹ ٹیم کے مابین ایبٹ آباد میں میچ 29 مارچ کو کھیلا جانا تھا۔ بتایا گیا ہے کہ اعجاز بٹ اور رحمان ملک کے مابین ہونے والی اس ملاقات میں افغان کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان کے دوران سکیورٹی کو یقینی بنانے کے حوالے سے تفصیلی گفتگو ہوئی۔

پاکستانی کرکٹ بورڈ نے کہا ہے کہ اب افغانستان کی کرکٹ ٹیم اپنا پہلا میچ 25 مئی کو اسلام آباد میں کھیلے گی،27 مئی کو دوسرا ایک روزہ میچ راولپنڈی میں منعقد کیا جائے گا جبکہ تیسرا اور آخری میچ 29 مئی کو فیصل آباد میں کھیلا جائے گا۔ پی سی بی نے ایبٹ آباد میں میچ منسوخ کرنے کے حوالے سے کوئی بھی بیان نہیں دیا تاہم خبر رساں ادارے روئٹرز نے پی سی بی کے ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا ہےکہ یہ تبدیلی رحمان ملک اور اعجاز بٹ کے مابین ہونے والی ایک ملاقات کے بعد ہوئی ہے،’ سکیورٹی کے کچھ مسائل ہیں، اس لیے بہتر ہے کہ افغان کرکٹ ٹیم ایبٹ آباد کے بجائے اسلام آباد میں اپنا میچ کھیلے‘۔

مارچ 2009ء میں لاہور میں سری لنکا کی کرکٹ ٹیم پر ہوئے دہشت گردانہ حملوں کے بعد افغانستان کی کرکٹ ٹیم پہلی غیر ملکی ٹیم ہو گی، جو پاکستان میں کھیلے گی۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: عابد حسین

DW.COM

ویب لنکس