1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

افغان پولیس افسر کا بیوی سے سرعام ’جان لیوا انتقام‘

افغانستان کے مشرقی صوبے پکتیکا میں ایک مقامی پولیس افسر نے اپنی بیوی کو اس وجہ سے سرعام گولی مار کر قتل کرنے کے بعد خود کشی کر لی کہ اسے شبہ تھا کہ اس کی بیوی مبینہ طور پر دوسرے مردوں کے ساتھ معاشقے چلاتی تھی۔

افغان دارالحکومت کابل سے پیر دو مئی کے روز موصولہ نیوز ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کی رپورٹوں کے مطابق پکتیکا میں پولیس کے نائب سربراہ نثار احمد عبدالرحیم زئی نے بتایا کہ اس پولیس افسر نے آج پہلے تو اپنی بیوی کو ایک بھرے بازار میں گولی مار کر قتل کر دیا اور پھر فوراﹰ ہی خود کو بھی گولی مار لی۔

عبدالرحیم زئی نے اس پولیس افسر کا نام نہیں بتایا اور نہ ہی یہ بتایا کہ وہ صوبائی پولیس میں کس سطح کا افسر تھا۔ صوبے پکتیکا کے ڈپٹی پولیس چیف کے بقول قاتل کو شبہ تھا کہ اس کی بیوی دوسرے مردوں سے معاشقے چلاتی ہے اور اسی لیے اس نے انتقاماﹰ اپنی بیوی کو پہلے ایک بھرے بازار میں گولی مار دی اور پھر اپنے پستول کا رخ اپنی طرف کر کے گولی چلا دی۔

بتایا گیا ہے کہ اپنی بیوی کو قتل کرنے والا یہ پولیس افسر تو موقع پر ہی دم توڑ گیا جبکہ اس کی بیوی شدید زخمی تھی۔ اسے فوری طور پر ایک مقامی ہسپتال پہنچا دیا گیا، لیکن وہاں پہنچائے جانے کے کچھ ہی دیر بعد وہ بھی دم توڑ گئی۔

ایسوسی ایٹڈ پریس نے لکھا ہے کہ افغانستان روایتی طور پر ایک بہت قدامت پسند پدر شاہی معاشرہ ہے، جہاں مردوں کی طرف سے عورتوں کے خلاف کیا جانے والا اور بہت سے واقعات میں جان لیوا ثابت ہونے والا گھریلو تشدد تشویشناک حد تک زیادہ ہے۔

DW.COM