1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

افغانستان کی خفیہ جیل میں قیدیوں سے ’بہیمانہ سلوک‘

ایک امریکی تھنک ٹینک نے انکشاف کیا ہے کہ افغانستان کی ایک خفیہ جیل میں امریکی فوجی قیدیوں کے ساتھ غیر انسانی سلوک روا رکھتے ہوئے خود اپنے اصولوں کی خلاف ورزی کر رہے ہیں۔

default

امریکہ کی ’اوپن سوسائٹی فاؤنڈیشن‘ کی جانب سے سولہ صفحات پر مشتمل ایک رپورٹ میں افغانستان میں قائم اس خفیہ جیل کو Tor Jail یا بلیک جیل کہا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق اس جیل میں قیدیوں کو نہ تو مناسب چھت فراہم کی گئی ہے، نہ ہی خوراک میسر ہے۔ ان کے ساتھ ہونے والا سلوک بنیادی انسانی حقوق کی کُھلی خلاف ورزی ہے۔

Gefängnisaufstand in Afghanistan

بگرام جیل کے علاوہ بھی افغانستان اور عراق میں مختلف جیلوں کے قیدیوں کے ساتھ امریکی فوجیوں کے غیر انسانی سلوک کی خبریں آتی رہی ہیں

پینٹاگون نے اس رپورٹ کی تردید کی ہے تاہم اُس نے کہا ہے کہ اس معاملے کی مکمل چھان بین کی جائے گی۔ پینٹا گون کے ایک ترجمان نے ان الزامات کو رد کرتے ہوئے کہا، ’امریکہ کا دفاعی محکمہ کسی قسم کی خفیہ جیل نہیں چلا تا۔ قیدیوں کی عارضی اسکریننگ کے لئے قائم کردہ حراستی کیمپ دراصل بین الاقوامی قوانین کے تحت کام کرتا ہے اور اس کا علم عالمی کمیٹی ریڈ کراس کو ہوتا ہے۔‘ تاہم اس ترجمان نے کہا ہے کہ ’اوپن سوسائٹی فاؤنڈیشن‘ کی طرف سے یہ رپورٹ پینٹاگون کے اہلکاروں تک پہنچ گئی ہے اور وہ اس کا جائزہ لے رہے ہیں۔ اوپن سوسائٹی ایک امریکی کروڑ پتی ’جارج سوروس‘ نے قائم کر رکھی ہے۔ اس سوسائٹی کی تازہ رپورٹ کے مطابق یہ مبینہ خفیہ جیل کابل کے مضافات میں بگرام ایئر بیس میں قائم تھی تاہم یہ وہ جیل نہیں ہے جو باقاعدہ دستاویزی طور پر وجود رکھتی ہے۔

وہاں قید افراد کے بیانات نہایت ہولناک حقائق پر سے پردہ اٹھاتے ہیں۔ ان قیدیوں کا کہنا ہے کہ انہیں خاص طور سے انتہائی سرد درجہ حرارت میں رکھا گیا۔ انہیں نہ تو مناسب غذا، نہ ہی بستر اور اوڑھنے کو کمبل میسر تھے۔ تمام قیدیوں کو قدرتی روشنی سے محروم رکھا جاتا تھا اور انہیں مذہبی فرائض انجام دینے کی اجازت نہیں تھی نہ ہی وہ جسمانی ورزش کر سکتے تھے۔ اوپن سوسائٹی کے اہلکاروں نے کہا ہے کہ ان قیدیوں کو ریڈ کراس کی انٹر نیشنل کمیٹی سے ملنے کی اجازت بھی نہیں تھی۔ اطلاعات کے مطابق چند قیدیوں کو کچھ عرصہ قبل تک یعنی سال رواں کے گزشتہ مہینوں تک اس خفیہ جیل میں مقید رکھا گیا۔

Guantanamo Flash-Galerie

باراک اوباما کی انتخابی مہم کے دوران کئے جانے والے وعدوں میں گوانتا نامو کی جیل کو بند کرنے کا وعدہ بھی شامل تھا

اس رپورٹ کے مصنف Jonothen Horowitz نے کہا ہے کہ اوبامہ انتظامیہ کو ان الزامات کونہایت سنجیدگی سے لینا ہو گا، جو افغانستان کے قید خانوں میں زبردست اصلاحات کی باتیں کرتی رہی ہے۔ جبکہ پینٹاگون کا دعویٰ ہے کہ وہ قیدیوں کے ساتھ ہمیشہ انسانی سلوک کرتا رہا ہے۔

رپورٹ: کشور مصطفیٰ

ادارت: ندیم گِل

DW.COM

ویب لنکس