1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

افغانستان میں ہیلی کاپٹر کی تباہی، نیٹو کے نو فوجی ہلاک

افغان دارالحکومت کابل سے موصولہ رپورٹوں کے مطابق ہندوکش کی اس ریاست کے جنوب میں مغربی دفاعی اتحاد نیٹو کی قیادت میں فرائض انجام دینے والی بین الاقوامی حفاظتی فوج آئی سیف کے ایک ہیلی کاپٹر میں آج نو فوجی ہلاک ہو گئے۔

default

افغانستان میں آئی سیف دستوں کے کئی گشتی یونٹ آج تک بم حملوں کا نشانہ بھی بن چکے ہیں

ISAF کے ذرائع نے کابل میں بتایا کہ اس حادثے میں نیٹو اور افغان نیشنل آرمی کے ایک ایک فوجی کے علاوہ ایک امریکی شہری بھی زخمی ہو گیا۔ نیٹو کی فوجی قیادت نے اس ہیلی کاپٹر حادثے میں ہلاک ہونے والے فوجیوں کی قومیتیں نہیں بتائیں۔

ISAF Soldaten der Bundeswehr Afghanistan

بین الاقوامی حفاظتی دستوں میں وفاقی جرمن فوج کے ارکان بھی شامل ہیں

امکان ہے کہ یہ غیر ملکی فوجی امریکہ، برطانیہ یا کینیڈا کے فوجی مشنوں کا حصہ تھے کیونکہ جنوبی افغانستان کے طالبان عسکریت پسندوں کی طاقت کا مرکز سمجھے جانے والے علاقے میں زیادہ تر امریکی، برطانوی اور کینیڈین جنگی دستے ہی متعین ہیں۔

آئی سیف کے ذرائع نے اس حادثے کے حوالے سے بتایا کہ فوری طور پر یہ اطلاع نہیں ملی کہ اس علاقے میں طالبان باغیوں کی طرف سے آئی سیف کے فوجی ہیلی کاپٹر پر کوئی فائرنگ کی گئی تھی۔ رپورٹوں کے مطابق اس کریش کی اصل وجوہات کے تعین کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔

جنگی ہیلی کاپٹر کی تباہی کا یہ واقعہ افغانستان میں 2010 کے دوران ایک لاکھ 50 ہزار کی نفری والی بین الاقوامی حفاطتی فوج ISAF کو پیش آنے والے سب سے ہلاکت خیز واقعات میں سے ایک ہے۔

افغانستان میں جاری جنگ کے دوران صرف سال رواں کے دوران اب تک آئی سیف کے کُل 500 سے زائد فوجی مارے جا چکے ہیں۔ یوں آئی سیف دستوں کے لئے یہ سال ان کے افغان مشن کے دوران آج تک کے سب سے خونریز برسوں میں سے ایک ثابت ہوا ہے۔

رپورٹ: مقبول ملک

ادارت: افسر اعوان

DW.COM