1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

افغانستان میں پاکستانی قونصل خانے کے دو اہلکار لاپتہ

افغان صوبے ننگرہار میں واقع پاکستانی قونصل خانے سے منسلک دو اہلکار افغانستان میں لاپتہ ہو گئے ہیں۔ وہ سترہ جون کو پاکستان کے لیے روانہ ہوئے تھے لیکن ابھی تک وہ پاکستان میں داخل نہیں ہو سکے ہیں۔

پاکستانی وزارت خارجہ نے بتایا ہے کہ افغانستان کے مشرقی صوبے ننگرہار کے دارالحکومت جلال آباد کے قونصل خانے سے منسلک دو اہلکار لاپتہ ہو گئے ہیں۔ دونوں اہلکار جمعہ سترہ جون کو بذریعہ کار پاکستان کی جانب اپنے سفر پر روانہ ہوئے تھے لیکن وہ ابھی تک اپنی منزل پر نہیں پہنچ سکے۔

حکومتِ پاکستان نے اس معاملے پرکابل حکومت سے اپنی تشویش ظاہر کی ہے۔ پاکستانی وزارت خارجہ کی درخواست پر افغان حکام نے ان کی تلاش میں ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی ہے۔ کابل حکومت نے ان لاپتہ اہلکاروں کی تلاش کے لیے تفتیشی عمل شروع کر دیا ہے۔

افغان حکام نے اپنے پاکستانی اہلکاروں کو بتایا ہے کہ لاپتہ افراد کو تلاش کرنے کے علاوہ اس میں ملوث افراد کو انصاف کے کٹہرے تک بھی لایا جائے گا۔ افغان حکام نے تفتیشی عمل شروع کرنے کی کوئی تفصیل فراہم نہیں کی ہے۔

Aussenministerium in Kabul, Afghanistan (Pahjwok Afghan News)

افغان دارالحکومت میں وزارتِ خارجہ کا صدر دفتر

ان لاپتہ اہلکاروں کی تلاش کے لیے اسلام آباد اور کابل نے تین مختلف تفتیشی ٹیمیں تشکیل دی ہیں۔ یہ ٹیمیں مختلف عسکری اور شدت پسند گروپوں کے ساتھ بھی رابطہ پیدا کر کے بنیادی معلومات حاصل کرتے ہوئے اپنی تفتیش آگے بڑھائیں گے۔

پاکستانی وزارت خارجہ نے ان افراد کے لاپتہ ہو جانے کے حوالے سے کسی قسم کا اندازہ یا کسی گروپ کی ممکنہ کارروائی پر تبصرہ کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ وزارت خارجہ کے مطابق ابھی کوئی مصدقہ معلومات موجود نہیں لہذا کچھ بھی نہیں کہا جا سکتا۔

مشرقی افغان صوبے ننگرہار میں دو عسکریت پسند تنظیمیں طالبان اور ’اسلامک اسٹیٹ‘ سرگرم ہیں۔ یہ امر اہم ہے کہ افغانستان میں متحرک بعض جنگی اور اسلام پسند گروپ ماضی میں بھی سفارتی عملے کو نشانہ بنانے کی کوششیں کرتے رہے ہیں۔