1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

’اسکول آف ٹومارو‘، کراچی میں پہلا تعلیمی و ثقافتی میلہ

کراچی میں ’اسکول آف ٹومارو‘ کے نام سے دو روزہ بین الاقوامی تعلیمی و ثقافتی میلہ 29 نومبر کو اپنے اختتام کو پہنچ رہا ہے۔ اس میلے میں ملک میں تعلیم کے مستقبل کے حوالے سے بات چیت کی جا رہی ہے۔

Pakistan Diskussion an der School of Tomorrow

کراچی میں ’اسکول آف ٹومارو‘ کے نام سے دو روزہ بین الاقوامی تعلیمی و ثقافتی میلے کے دوران ہونے والے ایک مذاکرے کا منظر

’اسکول آف ٹومارو‘ کے نام سے کانفرنسوں کے سلسلے کا آغاز 15 برس قبل پاکستان کے ایک پرائیویٹ اسکول نیٹ ورک کی طرف سے کیا گیا تھا۔ اس کانفرنس کے دوران منعقد کیے جانے والے ایونٹس میں عوام بھی شریک ہوتے ہیں اور ماہرین تعلیم بھی۔ ان ایونٹس کے دوران پاکستان میں اسکولوں کی سطح پر معیار تعلیم کی بہتری کے علاوہ اسکولوں میں تعلیم کے لیے استعمال ہونے والے طریقہٴ کار کی بہتری کے اقدامات بھی زیر غور آتے ہیں۔

اس کانفرنس میں خاص طور پر دنیا کے ترقی یافتہ ممالک کے تعلیمی نظاموں اور کلاس روم پریکٹسز کے بارے میں لوگوں کو آگاہ کیا جاتا ہے اور انہیں پاکستان میں لاگو کرنے کے لیے اقدامات تجویز کیے جاتے ہیں۔

پاکستان میں اپنی نوعیت کے اس پہلے میلے کے انعقاد کا مقصد علاقائی سیاست و عالمی سکیورٹی، ذرائع ابلاغ اور ڈیجیٹل ٹیکنالوجی، فن و ثقافت اور ماحول و معاشرے جیسی بیرونی طاقتوں کے اسکول پر پڑنے والے اثرات کو سمجھنا اور مستقبل کے لیے نئی سمتیں متعین کرنے کے لیے تجاویز دینا ہے۔

پاکستان کے ایک پرائیویٹ نیٹ ورک بیکن ہاؤس گروپ کی جانب سے منعقد کیے گئے اس میلے میں 140 سے زائد مقامی اور بین الاقوامی ماہرین شریک ہیں، جو مجموعی طور 42 سے زائد مختلف سیشنز میں اپنے خیالات کا اظہار کر رہے ہیں۔ ان میں آسٹریلوی اور امریکی ماہرین بھی شامل ہیں۔

پہلے روز منعقد ہونے والے سیشن میں معاشی بحران میں تعلیم کے ذریعے بقا، تعلیم کے مستقبل کے لیے نئی سمتوں کے تعین اور تصادم کے دور میں تعیلم کے ذریعے امن جیسے اہم موضوعات پر پینل ڈسکشنز ہوئیں۔

Pakistan Diskussion an der School of Tomorrow

ایک مذاکرے کے حاضرین میں سابق وزیر خارجہ خورشید محمود قصوری بھی نمایاں نظر آ رہے ہیں، جو کراچی کے اس میلے کو منظم کرنے والے پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک بیکن ہاؤس گروپ سے وابستہ ہیں

عصر حاضر کے والدین کے لیے ایک اہم مسئلہ کمپیوٹر، انٹرنیٹ اور سوشل میڈیا کے باعث بچوں کا متاثر ہونا ہے۔ اس حوالے سے ’اسکول آف ٹومارو‘ کانفرنس کے دوران 13 سال سے کم عمر بچوں کے فیس بک استعمال کرنے کے حوالےسے بھی ایک خصوصی مکالمہ ہوا، جس میں والدین کی بڑی تعداد نے شرکت کی، جس میں ماہرین نے اپنے رائے کا اظہار کیا۔

بچوں کے تعلیمی مستقبل پر ہونے والے اس میلے کی سب سے خاص بات فل اسٹیم (Full STEAM) کے نام سے ہونے والی نمائش ہے۔ اس میں سائنس، ٹیکنالوجی، انجینئرنگ، آرٹس اور میڈیا سے متعلق طالب علموں کی جانب سے مختلف اشیاء رکھی گئیں۔ اس کے علاوہ ’میکر اسپیس‘ کے نام سے منعقدہ نمائش بھی بڑوں بچوں دونوں کی توجہ کا مرکز بنی ہوئی ہے۔

Pakistan Diskussion an der School of Tomorrow

اس میلے میں 140 سے زائد مقامی اور بین الاقوامی ماہرین شریک ہیں، جو مجموعی طور 42 سے زائد مختلف سیشنز میں اپنے خیالات کا اظہار کر رہے ہیں

دو دن تک جاری رہنے والا یہ میلہ اتوار 29 نومبر کی شب اختتام کو پہنچے گا۔ اختتامی تقریب میں معروف گلوکار علی عظمت کے کنسرٹ کے علاوہ آتش بازی کا شاندار مظاہرہ بھی شامل ہے۔