1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

اسامہ بن لادن: شخصی خاکہ

سعودی عرب کے شہری اسامہ بن لادن کا تعلق ایک امیر و کبیر بن لادن خاندان سے تھا۔ وہ دس مارچ سن 1957 میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کو پہلی مئی سن 2011 کے روز امریکی آپریشن میں ہلاک کردیا گیا۔

default

اسامہ کی پیدائش کا شہر سعودی دارالحکومت ریاض ہے۔ اسامہ کے مطابق ان کے والد ایک انتہائی متمول شخص تھے اور وہ شاہی خاندان کے قریب سمجھے جاتے تھے۔ اسامہ اپنے باپ کی دسویں بیوی کی اکلوتی اولاد تھے۔ ان کی پیدائش کے فوری بعد ان کے والدین میں علیحدگی اور پھر طلاق ہو گئی تھی۔ بعد میں ان کی والدہ کے ایک اور شخص سے دوسری شادی رچا لی تھی۔

اسامہ بن لادن کی پرورش وہابی عقائد کے تحت ہوئی۔ اسی باعث ان میں

Osama bin Laden - Sticker an einem Hemd

اسامہ بن لادن کی تصویر فریم میں

انتہاپسندانہ خیالات نے مزید جگہ بنائی۔ ابتدائی تعلییم کے بعد انہوں نے شاہ عبدالعزیز یونیورسٹی میں بزنس ایدڈمنسٹریشن کی تعلیم بھی حاصل کی تھی۔ کچھ رپورٹرز کے مطابق بن لادن سول انجینئرنگ کی ڈگری کے حامل بھی تھے۔ ان کے قریبی افراد کا یہ بھی کہنا تھا کہ وہ یونیورسٹی سطح پر تعلیم مکمل نہیں کر سکے تھے۔

اسامہ بن لادن کی پہلی شادی سترہ سال کی عمر میں ایک شامی خاتون نجویٰ غنیم سے ہوئی تھی۔ بعد میں انہوں نے مختلف اوقات میں چار خواتین سے بھی شادیاں رچائی۔ ان کی اولاد کی تعداد پچیس کے قریب بتائی جاتی ہے۔

اسامہ پین عرب ازم، سوشلزم، کمیونزم اور جمہوریت کے کٹر مخالف تھے۔ وہ مسلم دنیا کے اندر شریعت اسلامی کے نفاذ کے حامی بھی تھے۔ ان کا یہ بھی خیال تھا کہ افغانستان میں ملا عمر کا دور صحیحیح اسلامی دور تھا۔ وہ اپنے انتہاپسندانہ نظریات کے تناظر میں اسرائیل کے بھی شدید مخالف تھے۔ وہ اپنے گروپ میں جہاد کی تبلیغ کیا کرتے تھے۔ وہابی مسلک کے پیروکار ہونے کی وجہ سے وہ موسیقی اور جمالیاتی فنون کے بھی مخالف تھے۔

امریکہ میں رونما ہونے ستمبر گیارہ سن 2001 کےدہشت گردانہ واقعات کے تناظر میں وہ امریکہ کو مطلوب افراد کی فہرست میں سب سے ٹاپ پر تھے۔

رپورٹ: عابد حسین

ادارت: شامل شمس

DW.COM

ویب لنکس