1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

اختیارات کا ناجائزاستعمال، پینٹاگون کے اعلیٰ اہلکار کے خلاف کارروائی

امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق پینٹاگون کے ایک اعلیٰ اہلکار کو ملکی محکمہء دفاع کے قواعد کی خلاف ورزی کرنے اور جھوٹ بولنے پر اپنے خلاف تحقیقات کا سامنا ہے۔

default

اطلاعات کے مطابق مائیکل فرلونگ نے پاکستان اور افغانستان میں جاسوسی کے لئے نجی جاسوسوں پر مشتمل ایک نیٹ ورک بنایا تھا اور ایسا کرتے ہوئے انہوں نے اپنے اختیارات سے تجاوز کیا تھا۔

اس امریکی اخبار کے مطابق پینٹا گون کے اس اعلیٰ اہلکار کے خلاف تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔ انہوں نے سن 2009ء کے اواخر میں جو غیر قانونی اور خفیہ نیٹ ورک بنایا تھا، وہ پاکستان اور افغانستان میں موجود عسکریت پسند گروپوں کے بارے میں معلومات اکٹھا کرتا تھا۔

بتایا گیا ہے کہ مائیکل فرلونگ نے اس نیٹ ورک کے بارے میں امریکی محمکہء دفاع کو بھی دانستہ طور پر غلط معلومات فراہم کی تھیں۔ پینٹاگون کے ترجمان ڈیوڈ لیپن نے تصدیق کی ہے کہ ابتدائی چھان بین کے بعد تفصیلی تحقیقات کا عمل شروع ہو چکا ہے۔

Verteidigungsminister Robert Gates

امریکی وزیر دفاع رابرٹ گیٹس

دوسری طرف امریکی ایئر فورس کے اعلیٰ سویلین اہلکار مائیکل فرلونگ نے اپنے خلاف لگائے جانے والے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی کمپنی جو بھی کام کر رہی تھی، اس کے لئے افغانستان متعین اعلیٰ فوجی قیادت نے منظوری دے رکھی تھی۔

پینٹا گون کے قواعد کے مطابق جاسوسی کے لئے نجی کنٹریکٹرز کی خدمات نہیں لی جا سکتیں تاہم اطلاعات کے مطابق مائیکل فرلونگ کے بنائے گئے نیٹ ورک کی طرف سے معلومات ملنے پر جنگجوؤں پر کئی حملے کئے گئے تھے۔

نیو یارک ٹائمز کے مطابق امریکی وزیر دفاع رابرٹ گیٹس نے اس خفیہ جاسوسی گروپ کے بارے میں حقائق منظر عام پر آنے کے بعد تفصیلی تحقیقات کا حکم دیا تھا۔

بتایا جاتا ہے کہ مائیکل فرلونگ کے خلاف ایک اور تحقیقاتی کمیشن بھی قائم کیا گیا ہے، جو اس بات کا جائزہ لے رہا ہے کہ آیا وہ اس معاہدے کے دوران کسی مالی بدعنوانی کے بھی مرتکب ہوئے۔ اس تحقیقاتی کمیشن کی سرپرستی امریکی فضائیہ کے انسپکٹر جنرل خود کر رہے ہیں۔

مائیکل فرلونگ نے اپنے نیٹ ورک میں کئی چھوٹی چھوٹی کمپنیوں کی خدمات حاصل کر رکھی تھیں، جن میں سے ایک کمپنی ایسی بھی تھی جو ایک سابقہ CIA ایجنٹ کی تھی۔ اس نیٹ ورک کا کام افغانستان اور پاکستان میں طالبان باغیوں کے خلاف معلومات جمع کرنا بتایا گیا ہے۔ نیو یارک ٹائمز کے مطابق مائیکل فرلونگ جس معاہدے کے تحت یہ سب کام کر رہے تھے، اس کی مالیت بیس ملین ڈالر تھی۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: مقبول ملک

DW.COM