1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

ابوظہبی ٹیسٹ: پاکستان کا ’کم بیک‘

ابوظہبی ٹیسٹ کے چوتھے دن کے اختتام تک جنوبی افریقہ نے اپنی دوسری اننگز میں 173 رنز بنا لئے ہیں اور اس کے چار کھلاڑی آؤٹ ہوئے ہیں۔ جنوبی افریقہ کو اب پاکستان پر 323 رنز کی سبقت حاصل ہو گئی ہے۔

default

میچ میں کامیابی کا دارو مدار یونس خان پر بھی ہوگا

ابوظہبی کے شیخ زید سٹیڈیم میں کھیلی جا رہی سیریز کے دوسرے اور آخری ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن کے اختتام پر جنوبی افریقی بلے باز ایشول پرنس ستائیس جبکہ وکٹ کیپر بیٹسمین مارک باؤچر 13 رنز پرناٹ آؤٹ ہیں۔

منگل کو پاکستانی سپن بالروں نے اچھی بولنگ کی اور جنوبی افریقی بلے بازوں کو مشکل میں ڈالے رکھا۔ اوپنرز ہاشم آملہ اور پیٹرسن نے اگرچہ اکیاسی رنز کی ساجھے داری کی تاہم ان کے آؤٹ ہونے کے بعد اے بی ڈویلیرز اور جیک کیلس جلد ہی آؤٹ ہو گئے۔

جنوبی افریقہ کی طرف سے کامیاب بلے باز ہاشم آملہ رہے، جنہوں نےباسٹھ رنز بنائے۔ پیٹرسن 35 جبکہ ڈویلیرز دس رنز بنا سکے، ان تینوں کو عبدالرحمان نے آؤٹ کیا۔ جیک کیلس دس کے انفرادی سکور پر محمد حفیظ کی ایک عمدہ گیند پر توفیق عمرکو کیچ دے بیٹھے۔

Kricket Jacque Kallis

جیک کیلس دوسری اننگز میں ناکام ہو گئے

اس سے قبل جب دن کے آغاز پر پاکستانی بلے بازوں نے تیسرے دن کے سکور 317 چھ کھلاڑی آؤٹ پر اپنی اننگز شروع کی، تو کپتان مصباح الحق اپنے77 رنز میں کوئی اضافہ کئے بغیر ہی سٹائن کے ہاتھوں ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔ اس وقت پاکستان کو مشکل سے نکالنے والے عبدالرحمان نے ساٹھ رنز کی ایک عمدہ اننگز کھیلی، جس کے نتیجے میں پاکستان نہ صرف فالو آن سے بچا بلکہ جنوبی افریقہ کی پہلی اننگز کی سبقت کو بھی کافی کم کیا۔ اس دوران عمر گل کے اکیس جبکہ تنویر احمد کےتیس رنز بھی پاکستان کے لئے انتہائی اہم رہے۔

جنوبی افریقہ کی طرف سے ڈیل سٹائن نے چار، پال ہیرس نے تین جبکہ بوتھا، کیلس اور مورکل نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔ پانچویں دن کے آغاز پر جنوبی افریقہ کی کوشش ہو گی کہ وہ جلد از جلد بڑا سکور کر کے پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دے دے تاکہ میچ کا کوئی نتیجہ برآمد ہو سکے۔ دوسری طرف ماہرین کا کہنا ہے کہ ابو ظہبی کی وکٹ وقت کے ساتھ ساتھ بیٹنگ کے لئے بہتر ہوتی جا رہی ہے اور اس صورت میں میچ کو کوئی نتیجہ نکلنے کی خاص امید نہیں ہے۔

جنوبی افریقہ اور پاکستان کے مابین کھیلی جا رہی اس دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ برابر رہا تھا۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: امجد علی

DW.COM