1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’آپ لوگ انتہائی فضول ہیں‘، یُنکر یورپی پارلیمان پر برہم

یورپی کمیشن کے سربراہ ژاں کلود یُنکر نے پارلیمان میں قانون سازوں کی کم حاضری پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ آپ لوگ ’نہایت فضول‘ ہیں۔

منگل کے روز اسٹراس برگ میں واقع یورپی پارلیمان میں مالٹا کی یورپی یونین کی شمشماہی صدارتی ذمہ داریوں سے متعلق بحث ہونا تھی۔ مالٹا کی یہ صدارتی مدت جمعے کے روز مکمل ہوئی ہے۔ تاہم اس بحث کے موقع پر یورپی قانون سازوں کی ایک بڑی تعداد غیر حاضر تھی۔  ینکر نے پارلیمان سے خطاب میں کہا، ’’پارلیمان میں ’صرف تیس ارکان‘ کی موجودگی بتا رہی ہے کہ یورپی قانون ساز ’سنجیدہ‘ نہیں۔‘‘

اس موقع پر پارلیمان کے صدر انتونیو تاجانی نے انہیں ٹوک کر درست زبان استعمال کرنے کا کہا تو ینکر کا جواب میں کہنا تھا کہ وہ کبھی ایسے پارلیمانی سیشن میں شرکت نہیں کریں گے۔ اس دوران پارلیمان کے صدر انتونیو تاجانی اور ینکر کے درمیان کچھ تند جملوں کا تبادلہ بھی ہوا۔

Straßburg EU-Parlament Parlamentspräsident Tajani (Getty Images/AFP/P. Hertzog)

تاجانی نے ینکر کو درست الفاظ کے استعمال کا کہا

 تاجانی کا اس موقع پر کہنا تھا کہ ینکر پارلیمان کے لیے ’احترام کا رویہ‘ اختیار کریں۔ تاجانی نے کہا، ’’آپ پارلیمان پر تنقید کر سکتے ہیں۔ مگر کمیشن پارلیمان کو کنٹرول نہیں کرتا بلکہ پارلیمان کمیشن کو کنٹرول کرتی ہے۔‘‘

 ینکر نے کہا کہ اگر فرانسیسی صدر یا جرمن چانسلر پارلیمان کا رخ کرتیں، تو ارکان کی حاضری کہیں زیادہ ہوتی۔ ینکر نے اس موقع پر کہا کہ یورپی قانون سازوں کو چھوٹے ملکوں کی سربراہی کو قبول کرنا اور سنجیدہ لینا سیکھنا چاہیے۔

واضح رہے کہ یورپی یونین کی صدارت رکن ریاستوں کے درمیان ہر چھ ماہ کے لیے منتقل ہوتی ہے۔ اس ویک اینڈ سے ایسٹونیا نے اگلے چھ ماہ کے لیے یورپی یونین کی صدارت سنبھالی ہے۔