1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

صحت

آلودہ فضا، کوکین سے زیادہ دل کے لیے خطرناک

ایک تحقیق کے مطابق آلودہ فضا کے باعث دل کا دورہ پڑنےکا خطرہ، کوکین کے استعمال کے باعث دل کے دورےکے خطرے سے زیادہ ہے۔

default

اِس تحقیق میں کہا گیا ہے کہ فضائی آلودگی کو الکحل اور کافی کے استعمال کے علاوہ جسمانی مشقت کے باعث دل کے دورے کا سبب بنے والے عوامل میں شمار کیا جا سکتا ہے۔

معروف طبی جریدے The Lancet journal میں شائع ہونے والی اس تحقیق میں محقیقین کا کہنا ہے کہ سیکس، غصہ، بھنگ کا استعمال، سینے اور تنفس کا انفیکشن کسی نہ کسی حد تک دل کے دورے کا سبب بنتا ہے۔ تاہم فضائی آلودگی، خاص طور سے زیادہ ٹریفک کے باعث پیدا ہونے والی آلودگی، دل کے دورے کے پیچھے کارفرما ایک بڑا سبب ہے۔

Straßenverkehr in Peking

تحقیق دانوں کے مطابق ٹریفک کا دھواں، دل کے دورے کا ایک بڑا سبب ہے

اس تحقیق سے حاصل ہونے والے نتائج کی روشنی میں سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ فضائی آلودگی جیسے مسئلے کو دل کے لیے خطرہ پیدا کرنے والے عوامل میں سے ایک کی حیثیت سے سنجیدگی سے لینا چائیے۔

اس تحقیقی ٹیم کی رہنمائی کی ہے، بیلجیئم کی ہیسلٹ یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے محقق سائنسدان Tim Nawrot نے۔ ایک ٹیلیفون انٹرویو میں وہ کہتے ہیں کہ ان کی یہ تحقیق ڈاکڑوں کو اس بات کی جانب راغب کرنے کی حوصلہ افزائی کرتی کہ وہ عوامی یا آبادی کی سطح پر اس خطرے کو کم کرنے کے بارے میں سوچیں۔ وہ کہتے ہیں، ’ڈاکڑ ہمیشہ مریضوں کا انفرادی سطح پر معائنہ کرتے ہیں اور اس دوران بظاہر کم خطرات کے حامل عوامل اتنے اہم نظر نہیں آتے۔ لیکن اگر ان عوامل کو پوری آبادی پر منطبق کر کے دیکھا جائے توان کا تعلق بڑے پیمانے پر عوامی صحت سے بنتا ہے‘۔

Kokain Konsumentin

فضائی آلودگی کوکین کے نشے سے زیادہ صحت کے لیے خطرناک ہے

اقوام متحدہ کے عالمی ادارہ برائے صحت نے بھی فضائی آلودگی کو ‘صحت کے لیے ایک بڑا ماحولیاتی خطرہ‘ قرار دیا ہے۔ ادارے کے ایک اندازے کے مطابق فضائی آلودگی ہر سال دنیا بھر میں دو ملین کے قریب ہونے والی قبل از وقت اموات کا سبب بھی ہے۔

اس تحقیق کے لیےNawrot کی ٹیم نے 36 مختلف مطالعاتی جائزوں سے حاصل کردہ مواد اکٹھا کیا۔ اس کے بعد دل کے دورے کا سبب بنے والے عوامل اور ان کے سبب ہونے والے تمام ہارٹ اٹیکس کی تعداد کا حساب لگایا۔ ان سے حاصل ہونے والے نتائج کے مطابق ٹریفک کے دھوئیں کے باعث دل کے دورے کا خطرہ سر فہرست رہا۔ اس کے بعد بالترتیب جسمانی تھکان یا مشقت، الکحل کا استعمال، کافی، فضائی آلودگی اور پھر غصہ، سیکس، کوکین کا نشہ، بھنگ کا استعمال اور آخر میں سانس سے متعلق انفیکشن رہی۔

Nawrot کے مطابق اس مطالعے سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ انفرادی سطح پر دیکھا جائے تو کوکین کے استعمال کے باعث لوگ دل کے دورے کا زیادہ شکار ہوتے ہیں۔ تاہم ٹریفک کے باعث ہونے والی آلودگی کے اثرات اجتماعی طور پر زیادہ اثر انداز ہوتے ہیں کیونکہ یہ ایک وقت میں زیادہ لوگوں کو متاثر کر رہی ہوتی ہے۔

رپورٹ: عنبرین فاطمہ

ادارت: امجد علی

DW.COM