1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

آصف زرداری کو قانونی چیلنج کا سامنا

لاہور ہائی کورٹ نے صدر آصف زرداری سے وضاحت طلب کر لی ہے کہ وہ صدر مملکت کا عہدہ اور اپنی پارٹی کے شریک چیئرمین کا منصب ایک ساتھ کس طرح سنبھال سکتے ہیں۔

default

پاکستان کے صدر آصف علی زرداری

Pakistan Banazir Bhutto

سابق پاکستانی وزیر اعظم بے نظیر بھٹو

صدر آصف علی زرداری کے دو عہدوں کے حوالے سے عدالت میں درخواست وکلاء کی ایک تنظیم ’پاکستان لائرز فورم‘ نے دائر کی ہے، جس کے جواب میں لاہور ہائی کورٹ نے صدر کے پرنسپل سیکریٹری کو جواب داخل کرنے کے لئے کہا ہے۔

پی ایل ایف کے صدر اے کے ڈوگر نے پیر کو کمرہء عدالت کے باہر صحافیوں سے بات چیت میں کہا، ’سیکیورٹی وجوہات کی بناء پر صدر خود عدالت میں پیش نہیں ہو سکتے، اس لئے عدالت نے ان کے پرنسپل سیکریٹری کو 25 مئی کو طلب کر لیا ہے۔‘

ملکی صدر کے لئے کسی سیاسی جماعت میں کوئی عہدہ رکھنے کی راہ میں کوئی قانونی رکاوٹ حائل نہیں ہے۔ تاہم اے کے ڈوگر کہتے ہیں کہ عدالت عظمیٰ ماضی میں ایک صدر کو پارٹی پوسٹ رکھنے سے روک چکی ہے۔

انہوں نے کہا، ’ہماری سپریم کورٹ نے 1993ء میں یہ فیصلہ دیا تھا کہ صدر مملکت کو کسی بھی سیاسی جماعت سے لاتعلق ہونا چاہئے۔ انہیں سیاسی کشمکش کا حصہ نہیں بننا چاہئے۔ انہیں سیاست سے کنارہ کش رہنا چاہئے، لیکن موجودہ صدر ایک سیاسی جماعت کے سربراہ ہیں اور یہ غیرقانونی ہے۔‘

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ دو عہدے ایک ساتھ رکھنے پر آصف علی زرداری کو فوری طور پر کوئی خطرہ لاحق نہیں۔ تاہم اس سے انہیں درپیش قانونی پیچیدگیاں ایک مرتبہ پھر کھل کر سامنے آ گئی ہیں۔

آصف زرداری سابق پاکستانی وزیراعظم بے نظیر بھٹو کے شوہر ہیں۔ وہ بے نظیر بھٹو کی ہلاکت کے بعد ان کی پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین بنے۔ یہ پارٹی فروری 2008ء کے انتخابات میں بڑی جماعت بن کر ابھری اور اس وقت حکمران اتحاد کی سربراہی کر رہی ہے۔ اس پارٹی کے دوسرے شریک چیئرمین آصف زرداری کے صاحبزادے بلاول بھٹو ہیں، جو برطانیہ میں تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔

Bilawal Bhutto an der Oxford University

پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین بلاول بھٹو زرداری

واضح رہے کہ آصف زرداری کو صدارت کا منصب سنبھالنے سے قبل بدعنوانی کے الزامات کا سامنا بھی رہا ہے، جن کا تعلق 1990ء کی دہائی میں بے نظیر بھٹو کے وزارت عظمیٰ کے دو ادوار سے ہے۔

دوسری جانب زرداری کے سیاسی حریف ان کے صدر کے منصب کی قانونی حیثیت پر سوال اٹھاتے ہیں جبکہ بعض یہ چاہتے ہیں کہ ان پر قائم کئے گئے بدعنوانی کے مقدمات کی فائلیں پھر سے کھولی جائیں۔ سپریم کورٹ بھی ان کے خلاف مقدمات کی بحالی پر زور دے چکی ہے۔ تاہم ملک کے صدر کے طور پر ایسے مقدمات میں انہیں رعایت حاصل ہے۔

رپورٹ: ندیم گِل

ادارت: امجد علی

DW.COM