1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

آسٹریلیا کی ایک اور جیت، حوصلے بلند

سات ایک روزہ میچوں کے سلسلے میں کھیلے گئے پہلے میچ میں آسٹریلیا نے انگلینڈ کو چھ وکٹوں سے شکست دے دی ہے۔ آسٹریلوی آل راؤنڈر شین واٹسن کی عمدہ اور دلکش اننگز نے انگلش ٹیم کو پوری طرح چت کر دیا۔

default

میلبورن میں کھیلے گئے اس میچ میں انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا اور 49.4 اوورز میں تمام کھلاڑیوں کے نقصان پر 294 رنز کا اچھا سکوربنایا لیکن آسٹریلیا نے 49.1 اوورز میں 297 رنز بنا کر یہ میچ جیت لیا۔

کھیل کے ہیرو شین واٹسن رہے جنہوں نے اپنے کیریئر کی بہترین اننگز کھیلی۔ انہوں نے چار چھکوں اور بارہ چوکوں کی مدد سے 161 رنز بنائے اور ناقابل شکست رہے۔ آسٹریلیا کی طرف سے ہیڈن نے انتالیس، کپتان کلارک نے چھتیس جبکہ کیمرون وائٹ نے پچیس رنز بنائے۔ انگلش بولروں میں سے نمایاں بولر ٹم بریسنن رہے جنہوں نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ اجمل شہزاد اور سوان نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

Kevin Pieterson

انگلش کھلاڑی کیون پیٹرسن نے 78 رنز بنائے

اس سے قبل جب انگلش ٹیم نے اپنی اننگز کا آغاز کیا تو اوپنرز سٹیون ڈیوس اور کپتان اینڈریو سٹراؤس نے پہلی وکٹ کی شراکت میں نوے رنز بنائے۔ ذاتی طور پر سٹراؤس نے تریسٹھ جبکہ ڈیوس نے بیالس رنز اسکور کیے۔ نمایاں انگلش بلے باز کیون پیٹرسن رہے جنہوں نے 78 رنز بنائے اور رن آؤٹ ہوئے۔

آسٹریلوی بولروں میں سے بریٹ لی، مچل جانسن اور اسمتھ نے دو دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ کھیل کا بہترین کھلاڑی شین واٹسن کو قرار دیا گیا۔ سات ایک روزہ میچوں کی سیریز میں دوسرا ایک روزہ میچ اکیس جنوری کو ہوبرٹ میں کھیلا جائے گا۔

ایشز میں ناکامی کے بعد آسٹریلوی ٹیم نے انگلینڈ کے خلاف ایک ٹوئنٹی ٹوئنٹی میچ میں کامیابی حاصل کرنے بعد اب پہلا ون ڈے بھی اپنے نام کر لیا ہے۔ کرکٹ ماہرین کا کہنا ہے کہ اب آسٹریلیا کا کھویا ہوا اعتماد بھی واپس آتا جا رہا ہے اور آئندہ میچوں میں اس کی کارکردگی مزید بہتر ہو جائے گی۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: مقبول ملک

DW.COM