1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

آسٹریلوی پولیس بھارتی بچے کے قاتلوں کی تلاش میں

آسٹریلیا میں ایک تین سالہ بھارتی بچے کے قتل کی واردات کے بعد وہاں موجود ایشیائی باشندوں میں بے چینی پائی جاتی ہے جبکہ وہاں کی حکومت نے فی الحال اس واقعے میں ’نسلی امتیاز‘ کے عنصر کی تصدیق نہیں کی ہے۔

default

آسٹریلیا میں پولیس ایک تین سالہ بھارتی بچے کے قاتلوں کی تلاش میں بڑے سرچ آپریشن میں سرگرم عمل ہے۔ ریاست وکٹوریہ کے پریمیئر John Brumby نے واقعہ کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ قتل کے محرکات ابھی واضح نہیں لہذا شواہد سامنے تک کسی بھی قسم کی قیاس آرائی نہ کی جائے۔ آسٹریلوی وزیر اعظم Kevin Rudd نے واقعے کو ’’خوفناک کہانی’’ قرار دیا ہے۔

Indien Australien Demonstrationen in Delhi gegen Rassismus

نئی دہلی میں آسٹریلوی سفارتخانے کے باہر مظاہرے کا منظر

خیال رہے کہ آسٹریلیا میں گزشتہ سال سے بھارتی باشندوں سے مبینہ نسلی امتیاز برتا جارہا ہے جس کے خلاف وہاں بسنے والے بھارتی باشندوں نے احتجاج بھی کیا اور نئی دہلی حکومت اس معاملہ کو سفارتی سطح پر بھی اٹھا چکی ہے۔

آسٹریلیا میں بھارتی بچے کے قتل کا واقعہ ایسے وقت میں پیش آیا ہے جب آسٹریلوی وزیر خارجہ Stephen Smith تعلقات کی بہتری کی کوششوں کے لئے نئی دہلی میں موجود ہیں۔ Smith نے بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ سے ملاقات میں انہیں یقین دلایا تھا کہ آسٹریلیا میں زیر تعلیم بھارتیوں کی سلامتی کو ممکن بنانے کے لئے خصوصی اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ وہ یہ بھی تسلیم کرچکے ہیں کہ بھارتیوں پر ہونے والے کچھ حملوں کے پیچھے واقعی ’’نسلی امتیاز‘‘ کی سوچ کار فرما تھی۔

Der australische Premierminister Kevin Rudd und die indische Präsidentin Pratibha Patil

آسٹریلوی وزیر اعظم Kevin Rudd دورہء بھارت کے موقع پر صدر پراتیبھا پاٹیل کے ساتھ

حالیہ واقعے کا شکار بننے والے معصوم بھارتی بچہ گروشان سنگھ اپنے والدین کے ساتھ بھارتی پنجاب سے وکٹوریہ آیا تھا۔ قتل کا واقعہ جمعرات کو بچے کی گمشدگی کے چند ہی گھنٹوں بعد پیش آیا۔ ریاست وکٹوریہ کے مقامی عہدیدار مشتعل بھارتی شہریوں کو صبر و سکون کی تلقین کررہے ہیں۔

آسٹریلوی میڈیا کی رپورٹوں کے مطابق وہاں موجود لگ بھگ ایک لاکھ بھارتی طالب علموں میں سے گزشتہ اٹھارہ ماہ میں سینکڑوں کو مارا پیٹا گیا، ان سے پیسے چھینے گئے جبکہ قتل کی ایک واردات بھی ہوئی۔ بھارتی میڈیا نے ان واقعات کو بڑے پیمانے پر ترویج دی تھی تاہم حالیہ قتل کے واقعے پر واضح توجہ دکھائی نہیں دیتی۔

رپورٹ : شادی خان سیف

ادارت : افسر اعوان

DW.COM